مساجد کو کسی صورت بند نہیں کیا جا سکتا، وزیراعظم اور وزیر مذہبی امور کی ملاقات

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) وزیراعظم عمران خان کاکہنا ہے کہ کورونا وائرس کی وباء کے دوران مساجد کو کسی صورت بند نہیں کیا جا سکتا لیکن ایس او پیز پر عملدرآمد ضروری ہے۔تفصیلات کے مطابق وزیرِ اعظم عمران خان سے وزیرِ مذہبی امور پیر نور الحق قادری نے ملاقات کی جس میں وزیرِ اعظم نے وزارتِ مذہبی امور کو کورونا وائرس کی وبا کے حوالے سے علما اور این سی او سی کے ساتھ مسلسل رابطے میں رہنےکی ہدایت کی۔وفاقی وزیر برائے مذہبی امور پیر نور الحق قادری نے وزیرِ اعظم سے علماء و مشائخ کونسل کی تنظیمِ نو پر بھی مشاورت کی۔وزیراعظم آفس کے میڈیا ونگ کی طرف

سے جاری بیان کے مطابق وزیراعظم نے ہدایت کی کہ وزارتِ مذہبی امور علما و مشائخ کو کورونا وائرس کی وبا کے پھیلاؤ کے اعداد و شمارکی فراہمی یقینی بنائے تاکہ دینی مواعظ اور خطبات میں کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد کی تاکید منبر کے ذریعے ممکن ہو۔عمران خان نے مزید کہا کہ مساجد کو کسی صورت بند نہیں کیا جا سکتا تاہم کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد کی تاکید ضروری ہے۔دوسری جانب گزشتہ روز ہونے والے صدر مملکت اور علما و مشائخ کے اجلاس کے بعد متفقہ اعلامیہ کی روشنی میں آج ملک بھر کی طرح وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں بھی یوم جمعہ کو یوم دعا کے طور پر منایا گیا، مساجد و امام بارگاہوں میں احتیاطی تدابیر کے ساتھ نمازیوں کے لئے مقررہ فاصلے پر جگہ بھی مختص کی گئیں۔وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری کی جانب سے بھی یوم دعا کے حوالے سے خصوصی پیغام جاری کیا گیا، نماز جمعہ میں علماء کرام نے عالم انسانیت کو اس وبائی مرض سے چھٹکارے اور پاکستان کی سلامتی کی خصوصی دعائیں بھی کرائیں اور کورونا سے بچاؤ بارے خطبات کے ساتھ احتیاطی تدابیر پر بھی زور دیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں