براؤزنگ زمرہ

شاعری

اس طرح حر ہو گیا ہے آج مہمانِ حسینؑ۔۔۔ سلام ۔۔۔ سید بصیر الحسن وفاؔ نقوی

اس طرح حر ہو گیا ہے آج مہمانِ حسینؑ اب قیامت تک رہے گا زیرِ دامانِ حسینؑ یہ اذانیں یہ نمازیں کہہ رہی ہیں رات دن سرخرو ہے دینِ احمدؐ ہے یہ احسانِ حسینؑ کردیا ثابت شبِ عاشور میں اصحاب نے ان پہ قرباں ہیں حسینؑ اور وہ ہیں قربانِ حسینؑ تیر…

یہ سانحہ زمیں پہ تو ایسا ہوا نہ تھا ۔سلام ۔۔۔ ناصرؔشکیب

یہ سانحہ زمیں پہ تو ایسا ہوا نہ تھا وہ کون سا تھا ظلم جو ان پر روا نہ تھا بکھرے پڑے تھے دشت میں ہیرے حسینؑ کے ایسی سخاوتیں کہ خزانہ بچا نہ تھا اس کے بدن کو کر دیا لشکر نے پاش پاش پھولوں کی چوٹ کا بھی تو جس کو پتا نہ تھا پروانے اپنے عشق…

جیسے اصغرؑ آئے ہیں شاہِ ہدیٰ کی گود میں ۔۔۔ سلام: ڈاکٹر کیفیؔ سنبھلی

جیسے اصغرؑ آئے ہیں شاہِ ہدیٰ کی گود میں آج بھی قرآن ہے کرب و بلا کی گود میں اب کبھی بچے کھلانا تو کہاں ہوگا نصیب تیر ہی رہ جائیں گے بس حرملہ کی گود میں تیرگی نے عمر میں منظر یہ دیکھا پہلی بار شمعیں روشن ہو اٹھی ہیں خود ہوا کی گود میں…

ہم ایک شہر میں جب سانس لے رہے ہوں گے ۔۔۔ فریحہ نقوی

ہم ایک شہر میں جب سانس لے رہے ہوں گے ہمارے بیچ زمانوں کے فاصلے ہوں گے وہ چاہتا تو یہ حالات ٹھیک ہو جاتے بچھڑنے والے سبھی ایسا سوچتے ہوں گے یہ بے بسی سے تری راہ دیکھنے والے گئے دنوں میں ترے خواب دیکھتے ہوں گے کہا بھی تھا کہ زیادہ قریب مت…

تو نے دیکھا ہے کبھی ایک نظر شام کے بعد ۔۔۔ فرحت عباس شاہ

تو نے دیکھا ہے کبھی ایک نظر شام کے بعد کتنے چپ چاپ سے لگتے ہیں شجر شام کے بعد اتنے چپ چاپ کہ رستے بھی رہیں گے لا علم چھوڑ جائیں گے کسی روز نگر شام کے بعد میں نے ایسے ہی گنہ تیری جدائی میں کئے جیسے طوفاں میں کوئی چھوڑ دے گھر شام کے بعد…

تکلم سے لگے گھائو پہ مرہم سی دوا اردوا ۔۔۔ فیصل اظفر علوی

تکلم سے لگے گھاؤ پہ مرہم سی دوا اردو کوئی ثانی نہیں ہے سب زبانوں سے جدا اردو تجھے بچوں کو ورثے میں اگر تہذیب دینی ہے بٹھا کر پاس اپنے پھر محبت سے سکھا اردو مقامِ میرؔ و غالبؔ، فرحتؔ و محسنؔ جدا کیسے اگر پوچھے کوئی تجھ سے تو فوراََ سے بتا…

بیٹھے ہیں چین سے کہیں جانا تو ہے نہیں ۔۔۔ رحمان فارس

بیٹھے ہیں چین سے کہیں جانا تو ہے نہیں ہم بے گھروں کا کوئی ٹھکانا تو ہے نہیں تم بھی ہو بیتے وقت کے مانند ہو بہو تم نے بھی یاد آنا ہے آنا تو ہے نہیں عہد وفا سے کس لیے خائف ہو میری جان کر لو کہ تم نے عہد نبھانا تو ہے نہیں وہ جو ہمیں عزیز…

ادائے عشق ہوں پوری انا کے ساتھ ہوں میں ۔۔۔ علی زریون

ادائے عشق ہوں پوری انا کے ساتھ ہوں میں خود اپنے ساتھ ہوں یعنی خدا کے ساتھ ہوں میں مجاوران ہوس تنگ ہیں کہ یوں کیسے بغیر شرم و حیا بھی حیا کے ساتھ ہوں میں سفر شروع تو ہونے دے اپنے ساتھ مرا تو خود کہے گا یہ کیسی بلا کے ساتھ ہوں میں میں چھو…

سلام ۔۔۔ سید بصیر الحسن وفاؔ نقوی

ذکرِ شبیرؑ میں رونے کا صلہ ملتا ہے مصطفیٰؐ ملتے ہیں بندے کو خدا ملتا ہے ہاتھ پھیلائے ہیں مجلس میں کہا کچھ بھی نہیں شہ کی جانب سے ہمیں دیکھئے کیا ملتا ہے پاک خوں پاک نظر پاک صفت ہو پہلے تب کہیں جاکے ہمیں فرشِ عزا ملتا ہے اس کی ٹھوکر میں…