حکومت کا عید میلا النبی ﷺ کے موقع پر قیدیوں کی سزاؤں میں کمی کا فیصلہ

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) حکومت نے عید میلادالنبی کے موقع پر قیدیوں کی سزاؤں میں کمی کی منظوری دے دی۔میلاد النبی ﷺ کے موقع پر ملک بھر میں قیدیوں کی سزاؤں میں ایک ماہ کی کمی کردی گئی۔ وزارت داخلہ نے وفاقی کابینہ اور صدر مملکت عارف علوی کی منظوری کے بعد سزاؤں میں تخفیف کیلئے تمام صوبوں اور گلگت بلتستان کو مراسلہ بھجوا دیا۔2 تہائی سزا مکمل کرنے والے قیدیوں کی سزاؤں میں بھی ایک ماہ کمی ہوگی اور 18 سال سےکم عمر قیدیوں کی سزاؤں میں بھی 30 دن کی معافی دی گئی ہے۔مراسلے میں کہا گیا کہ دہشتگردی، ریاست مخالف سرگرمیوں میں ملوث، کرپشن اور قومی خزانے کو نقصان پہنچانے والے قیدیوں کی سزاؤں میں کمی نہیں ہوگی۔

مراسلے میں کہا گیا ہے کہ صدر نے عیدمیلادالنبیﷺ پر قیدیوں کی سزاؤں میں خصوصی کمی کا اعلان کیا، سنگین جرائم میں ملوث قیدیوں کے علاوہ تمام مجرموں کی سزاؤں میں ایک ماہ کی کمی کردی گئی۔کرپشن اور قومی خزانے کو نقصان پہنچانے کے مجرموں پر بھی کمی کا اطلاق نہیں ہوگا۔ دہشتگردی اور ریاست مخالف سرگرمیوں کے قیدیوں کی سزاؤں میں بھی کمی نہیں ہوگی۔مراسلے کے مطابق سزا کا دوتہائی حصہ مکمل کرنے والے قیدیوں کی سزاؤں میں بھی ایک ماہ کی کمی کردی گئی، 65 سال سے زائد عمر کے قیدیوں کی سزاؤں میں بھی ایک ماہ کی کمی ہوگئی، سزا ایک تہائی حصہ مکمل کرنے والی60سال سے زائد عمر خواتین کی سزائیں بھی کم کردی گئیں۔بچوں کے ہمراہ قید خواتین کی سزاؤں میں بھی ایک ماہ کی کمی کردی گئی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں