حکومت کا ملک میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں نہ بڑھانے کا اعلان

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) حکومت نے ملک میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں نہ بڑھانے کا اعلان کردیا ۔ تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر خزانہ مفتاح اساعیل نے کہا کہ تیل اور دیگر اشیاء کی قیمتوں میں اضافے سے عوام پر بوجھ پڑے گا ‘ میں اور میرا وزیر اعظم عوام پر بوجھ ڈالنے کے حق میں نہیں‘ میں آئی ایم ایف سے دوبارہ ملاقات کرنے جا رہا ہوں ، ہم کوئی نہ کوئی بیچ کا راستہ نکالیں گے ۔انہوں نے کہا کہ شوکت ترین نے آئی ایم ایف سے سبسڈی ختم کرنے کا وعدہ کیا تھا لیکن ہم پیٹرول کی قیمت نہیں بڑھائیں گے بلکہ عوام کو ریلیف دیں گے اور آئی ایم

ایف کے ساتھ معاملات خوش اسلوبی سے حل کریں گے ، ہم ان جیسا وعدہ نہیں کریں گے چینی سستی دے رہے ہیں کچھ عرصے بعد مزید سستی دینے کا کہہ دیا ۔مفتاح اسماعیل نے کہا کہ 4 سال پہلے جب ہم نے حکومت چھوڑی گندم ایکسپورٹ کرتے تھے ، پی ٹی آئی حکومت نے چینی ایکسپورٹ کی اور مہنگی امپورٹ بھی کی ، گنا، گندم اور کپاس تینوں کی پیدوار ان کے دور میں کم ہوئی ہے لیکن اس سال پھر ہم گندم ایکسپورٹ کریں گے۔انہوں نے کہا کہ کیا فوڈ سیکیورٹی میں مشکوک افراد کو بٹھایا گیا ہے؟ کیا یوریا کی اسمگلنگ کرائی گئی ہے؟ یوریا کی اسمگلنگ میں بہت سے لوگ ملوث ہوتے ہیں ، پنجاب حکومت کے بغیر یہ اسمگلنگ ممکن نہیں ہوتی، گندم بھی پاکستان سے اسمگل ہوئی ، ہم زراعت کو ٹھیک نہ کر سکے تو ملک آگے نہیں بڑھ سکتا ۔ علاوہ ازیں ملکی معیشت کی موجودہ صورتحال سے متعلق پی ٹی آئی رہنماء اسد عمر کے بیان پر وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا کہ معاشی حالات آپ خطرناک حد تک لے گئے تھے ، ہم معیشت میں بہتری لانے کی کوشش کر رہے ہیں ، 71 سال میں لیے گئے تمام قرضوں کا 80 فیصد تحریک انصاف حکومت نے لیا ، 1983 اور 1984 کے بعد سب سے کم کپاس پیدا کی گئی ، 2018ء میں ہم نے حکومت چھوڑی تو گندم اور چینی برآمد کر رہے تھے ، تحریک انصاف نے چینی اور گندم کی درآمد ختم کر دی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں