ملک کے جید علمائے کرام کا عمران خان کی حمایت کا اعلان

اسلام آباد (نیوز ڈیسک ) ملک کے جید علمائے کرام نے سابق وزیراعظم عمران خان کی حمایت کا اعلان کردیا ۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان سے مختلف مکاتبِ فکرکےعلمائے کرام اور نمائندوں کے وفد نے ملاقات کی ، اسلام آباد میں ہوئی اس ملاقات میں ثروت اعجاز قادری ، صاحبزادہ ابوالخیر زبیر ، صاحبزادہ حامد رضا ، محمد اجمل قادری شریک ہوئے ، اس کے علاوہ مولانا گل نصیب ، ڈاکٹر سبیل اکرام ، ناصرشیرازی ، مولانا شجاع الملک ، ڈاکٹراحسان دانش ، سید ضیااللہ شاہ بخاری سمیت دیگر علمائے کرام بھی ملاقات کرنے والوں میں شامل تھے۔
بتایا گیا ہے کہ ملاقات میں عمران خان نے حکومت مخالف مارچ کے حوالے سے اپنے نقطہ نظر سے علمائے کرام کو آگاہ کیا جب کہ مذہبی اور دینی شخصیات نے سازش کے نتیجے میں منتخب جمہوری حکومت کے خاتمے پر تشویش کا اظہار کیا اور عدالتی کمیشن کے قیام سمیت کھلی عدالت میں مراسلے کی تحقیقات کے مطالبے کی بھی تائید کی۔معلوم ہوا ہے کہ اس موقع پر ایک قرارداد کی بھی متفقہ طور پر منظوری دی گئی، جس میں کہا گیا کہ پاکستان کلمہ کی بنیاد پر وجود میں آنے والی اسلامی جمہوری ریاست ہے ، ریاست پاکستان میں اقتداراعلیٰ کی واحد مالک خدا کی ذات ہے ، سازش و مداخلت سے منتخب جمہوری حکومت کا تختہ الٹنے پر گہری تشویش ہے۔قرارداد میں کہا گیا کہ اسلاموفوبیا کے تدارک کیلئےعمران خان کی خدمات ہیں، عمران خان نے بطور وزیراعظم اسلام کی سربلندی کیلئےغیر معمولی محنت کی ، اسلاموفوبیا پر قرارداد کی منظوری عمران خان کی خدمت کی عکاسی کرتی ہے ، اس کے علاوہ سیرت رسولﷺ کی نصاب میں شمولیت اور رحمت اللعالمین اتھارٹی کا قیام عمران خان کی عقیدت کی علامت ہیں۔ علمائے کرام کی جانب سے پیش کردہ قرارداد میں خفیہ مراسلے پر قومی سلامتی کمیٹی کے دونوں اجلاسوں کے اعلامیوں کی تائید کی گئی اس کے ساتھ ہی عدالتی کمیشن کی تشکیل اور کھلی تحقیقات کے مطالبے کی توثیق کی گئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں