چوہدری شجاعت نے اللہ کے عذاب سے نجات کا طریقہ بتادیا

لاہور (نیوز ڈیسک) سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ (ق) کے سربراہ چودھری شجاعت حسین نے مطالبہ کیا ہے کہ موٹروے پر خاتون کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے والے مجرموں کو سر عام کوڑوں کی سزا دی جائے۔چودھری شجاعت حسین کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ کو سرعام کوڑے مارے جائیں تاکہ لوگوں کو پتا لگ سکے کہ کوئی ان کی داد رسی کو آیا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ لاہور موٹروے پر خاتون کی عصمت دری کا واقعہ انتہائی افسوسناک ہے۔ ایسا شرمناک واقعہ پیش ہی نہیں آنا چاہیے تھا۔ اللہ تعالیٰ کی طرف سے جو عذاب لوگوں پر آیا ہوا ہے، وہ شاید اس سانحہ

کے مظلوموں کی داد رسی سے ختم ہو جائے۔دوسری جانب موٹروے پر خاتون کی آبروریزی کرنے والے ملزمان ابھی تک آزاد ہیں۔ حکام نے تفتیش کا دائرہ وسیع کرتے ہوئے علاقے کے تمام افراد کے ڈی این اے ٹیسٹ کرانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ذرائع کے مطابق گینگ ریپ واقعہ کے بعد شک کی بنیاد پر گرفتار ہونے والے تمام 15 افراد کے ڈی این اے میچ نہیں ہو سکے ہیں، اس لئے حکام کی جانب سے کرول گھاٹی کے تمام رہائشیوں کے ٹیسٹ کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔دنیا نیوز ذرائع کے مطابق تمام رہائشیوں کے ڈی این اے سیمپلنگ کیلئے کرول گھاٹی کے قریب فیلڈ ہسپتال بنایا جائے گا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.