حکومت نے عوام پر پٹرول بم گرادیا، فی لیٹر پٹرول کی قیمت میں ہوشربااضافہ

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) وفاقی حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کردیا۔ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 9سے 12روپے تک کا اضافہ کیا گیا ہے۔وفاقی وزارت خزانہ نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا نوٹیفکیشن جاری کردیا۔ نوٹیفیکیشن کے مطابق پیٹرول کی قیمت میں 10روپے 49پیسے فی لیٹر کا بڑا اضافہ کیا گیا ہے۔ پیٹرول کی نئی قیمت 137روپے 79پیسے پر پہنچ گئی۔ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت 12روپے 44پیسے بڑھا دی گئی ہے جس کے بعد ہائی اسپیڈ ڈیزل کی نئی قیمت 134 روپے48پیسے ہو گئی ہے۔مٹی کے تیل کی قیمت

10روپے 95پیسے اضافے کے بعد 110روپے26پیسے ہو گئی ہے۔لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 8روپے84پیسے کا اضافہ کر دیا گیا۔لائٹ ڈیزل کی نئی قیمت 108روپے 35پیسے مقرر کی گئی ہے۔پیٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں کا اطلاق 16 اکتوبر یعنی آج سے ہو گیا ہے۔حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمت 85ڈالر فی بیرل تک بڑھ جانے کے بعد کیا ہے۔عالمی منڈی میں اس وقت تیل کی قیمت تین سال کی بلند ترین سطح پر پہنچ چکی ہے۔ عالمی مارکیٹ میں اکتوبر 2018 کے بعد تیل کی یہ زیادہ سے زیادہ قیمت ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں