جمائمہ نے عمران خان سے علیحدگی اور پاکستان چھوڑنے سے متعلق لمبے عرصے بعد خاموشی توڑ دی

لندن( نیوز ڈیسک ) وزیراعظم عمران خان کی سابق اہلیہ جمائما گولڈ اسمتھ نے تازہ ترین انٹرویو میں پاکستان چھوڑنے کی وجہ بتا دی۔جمائما نے دعویٰ کیا کہ انہیں پاکستان اس لیے چھوڑنا پڑا کیونکہ ان کے خلاف سیاسی بنیادوں پر کیس بنائے جا رہے تھے اور انہیں عمران خان کو نشانہ بنانے کے لیے استعمال کیا جا رہا تھا۔میڈیا رپورٹ کے مطابق جمائما نے برطانوی اخبار دی ایوننگ سٹیڈرڈ کے ساتھ اپنے آئندہ آنے والے شو ’دی امپیچمنٹ‘ کے بارے میں بات کرتے ہوئے اپنی نجی زندگی کے بارے میں بھی بات کی۔انہوں نے کہا کہ ان کی شادی اپنے سے کافی عمر کے شخص سے ہوئی تھی جو کہ سیاسی

طور پر طاقتور تھا اور اسے نقصان پہنچانے کے لیے مجھے ٹارگٹ کیا جا رہا تھا۔انہوں نے بتایا کہ سیاسی بنیادوں پر جیل کی دھمکی بھی دی گئی تھی۔جمائما نے انٹرویو میں اریجنڈ میرج کے فائدے بھی بتائے اور کہا کہ جب وہ پاکستان میں تھیں تو ارئجنڈ شادیاں کرواتی تھیں۔اور ان کے شوہر کے دوستوں کے بچے کہتے تھے کہ وہ اریجنڈ میرج کرنے کو تیار ہیں لیکن اس میں جمائما کا شامل ہونا ضروری ہے۔وزیراعظم کی سابقہ اہلیہ نے مزید کہا کہ وہ جانتی ہیں کہ جبری شادی ایک مکمل بور پر مختلف چیز ہے لیکن انہوں نے ’اسسٹڈ میرج‘ کو کامیاب ہوتے دیکھا۔جمائما کا کہنا تھا کہ جب وہ پاکستان گئی تھیں تب وہ ایرجنڈ میرج کو پرانا اور پاگلوں والا خیال سمجھتی تھیں اور رومانی رشتوں پر ہی یقین رکھتی تھیں لیکن دس سال پاکستان میں رہنے کے بعد جب برطانیہ واپس لوٹیں تو انہیں اریجنڈ میرج میں کچھ فوائد نظر آئے۔یہاں واضح رہے کہ جمائما گولڈ اسمتھ آئے روز پاکستان میں خبروں کی زینت بنی رہتی ہے جس کی وجہ ان کا پاکستان سے لگاؤ ہے۔ وزیراعظم عمران خان کی سابقہ اہلیہ جمائما گولڈ اسمتھ اب بھی وزیراعظم عمران خان کی بہترین دوست ہیں۔ بچوں کی وجہ سے دونوں کے مابین اچھے تعلقات ہیں ۔ جمائما گولڈ اسمتھ نے سابقہ اہلیہ ہونے کے باوجود عمران خان کی دوسری اور تیسری شادی پر انہیں مبارکباد پیش کی جبکہ وہ اکثر ان کے اچھے اقدامات اور فیصلوں کو سراہتے ہوئے بھی نظر آتی ہیں۔ جمائما گولڈ اسمتھ کی جانب سے وقتاً فوقتاً عمران خان کے لیے نیک خواہشات کا اظہار بھی کیا جاتا ہے یہی وجہ ہے کہ ٹویٹر صارفین ” عمران خان سے محبت” سے متعلق اکثر ہی ان سے سوالات کرتے نظر آتے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں