پاکستان مخالف بیان پر عامر لیاقت نے شیریں مزاری کی بیٹی ایمان مزاری کو کھری کھری سنادیں

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی عامر لیاقت حسین اور وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق شیریں مزاری کی بیٹی کے درمیان لفظی جنگ چھڑ گئی ۔ سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے ایک پیغام میں شیریں مزاری کی صاحبزادی ایمان مرازی نے لکھا کہ پاکستان وہ ملک ہے جس میں عورتوں سے نفرت کی جاتی ہے۔ایمان مزاری کی طرف سے یہ پیغام موٹر وے پر خاتون سے جنسی زیادتی کے واقعے کے بعد سامنے آیا، جس پر ڈاکٹر عامر لیاقت حسین نے وفاقی وزیر شیریں مزاری کی بیٹی کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے اپنے ٹویٹر پیغام

میں لکھا کہ جو کہنا ہے اپنی ماں کو کہو! میرے ملک کے خلاف بکواس کرنے کی چنداں ضرورت نہیں، سرعام پھانسی کی مخالفت تمہاری اماں جان اور تمہاری ذہنی جماعت پیپلزپارٹی کرتی ہے، اگر میرا ملک خواتین سے نفرت کرتا تو بے نظیر شہید پہلی خاتون وزیراعظم ہوتیں نا ہی تمہاری اماں وزیر انسانی حقوق!!! جاہل ۔ دوسری طرف ایک اور اینکرپرسن نادیہ مرزا نے بھی وفاقی وزیر ڈاکٹر شیریں مزاری کی بیٹی ایمان مزاری کو جواب دیا اور اپنے ٹویٹر پیغام میں کہا کہ کوئی اسے بتائے کہ اس کی اپنی ماں جو کہ ایک خاتون ہیں وہ پاکستان کی انسانی حقوق کی وفاقی وزیر ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.