کورونا کے بعد ایک اور بیماری نے لاہور میں گھر کرلیا، کیسز کی بڑی تعداد سامنے آگئی

لاہور(نیوز ڈیسک)وزیرصحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے لاہور کے71 ہزارگھروں سے ڈینگی لاروا ملنے کا انکشاف کیا ہے، انہوں نے کہا کہ ڈیڑھ ماہ میں لاہورڈینگی کی آماجگاہ بن گیا ہے، ہسپتالوں میں ڈینگی کے مریضوں کیلئے بیڈز بھی مختص کر دیے گئے، عوام ڈیڑھ ماہ ڈینگی سے بچاؤ کیلئےاحتیاطی تدابیر اختیار کریں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا، اس موقعہ پر سیکرٹری پرائمری اینڈ سکینڈری اور سیکرٹری سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر بھی موجود تھے۔وزیر صحت پنجاب نے کہا کہ ڈیڑھ ماہ میں لاہورڈینگی کی آماجگاہ بن گیا ہے، ہسپتالوں میں ڈینگی کے مریضوں کیلئے بیڈز بھی مختص کر دیے گئے،

عوام ڈیڑھ ماہ ڈینگی سے بچاؤ کیلئےاحتیاطی تدابیر اختیار کریں۔نجی وسرکاری ہسپتالوں میں ڈینگی مریضوں کو مفت ادویات دینے کی ہدایت کی ہے۔ ڈاکٹر یاسمین راشد نے کورونا وائرس کی صورتحال سے متعلق بتایا کہ پنجاب میں کورونا وباء کی چوتھی لہر دم توڑ گئی ہے، پنجاب کے4 کروڑ75 لاکھ افراد کو کورونا سے بچاؤ کی ویکسین لگائی جاچکی۔ویکسی نیشن کی جعلی انٹریوں پر79 افراد کیخلاف محکمانہ کارروائی اور 16 افراد پر مقدمات درج کرائے گئے۔ دوسری جانب وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی ترقی واصلاحات وخصوصی اقدامات اسدعمر نے کہا ہے کہ ‏الحمد للہ کم سے کم ایک ویکسین لگانے والوں کی تعداد 6 کروڑ سے تجاوز کرگئی ہے۔ انہوں نے ہفتہ کو اپنے ٹویٹ میں کہا کہ آج انشاءاللہ مکمل ویکسینیشن کروانے والوں کی تعداد 3 کروڑ سے زائد ہو جائے گی۔ 31 دسمبر تک 7 کروڑ پاکستانیوں کی ویکسینیشن کے ہدف کو انشاءاللہ حاصل کیا جائے گا۔ جن لوگوں نے ابھی تک ویکسین نہیں لگوائی تو وہ آج ہی لگوائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں