وزیراعظم عمران خان نے ذاتی طور پر نیوزی لینڈ کی وزیراعظم کو سکیورٹی کی یقین دہانی کروائی تھی

راولپنڈی( نیوز ڈیسک) پاکستان اور نیوزی لینڈ کے مابین سیریز سکیورٹی خدشات کے باعث منسوخ ہوگئی۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان اور نیوزی لینڈ کے مابین سیریز کے حوالے سے نیوزی لیںڈ کی حکومت اور کرکٹ بورڈ کو سکیورٹی کے حوالے سے اعتماد میں لیا گیا تھا جبکہ وزیراعظم عمران خان نے بھی ذاتی طور پر نیوزی لینڈ کی ہم منصب کو سکیورٹی کے فول پروف ہونے کے حوالے سے یقین دہانی کروائی تھی۔وزیراعظم عمران خان نے ذاتی طور پر نیوزی لینڈ کی وزیراعظم سے رابطہ کرکے انہیں بتایا تھا کہ ہماری سکیورٹی انٹیلی جنس ایجنسی دنیا کی ایک بہترین ایجنسی ہے اور مہمان ٹیم کی سکیورٹی کو کوئی خطرہ نہیں ہے۔تاہم اب یہ سیریز سکیورٹی خدشات کے پیش نظر منسوخ کر دی گئی ہے۔

ترجمان پی سی بی کے مطابق آج نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ نے آگاہ کیا کہ انہیں سکیورٹی کے حوالے سے الرٹ کیا گیا ہے اس لیے یکطرفہ طور پر سیریز ملتوی کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ترجمان پی سی بی نے اپنے بیان میں کہا کہ ’پاکستان کرکٹ بورڈ اور حکومت پاکستان نے مہمان ٹیم کی سکیورٹی کے لیے فول پروف انتظامات کررکھے تھے۔پی سی بی ترجمان نے کہا کہ ہم نے نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ کو بھی یہی یقین دہانی کروائی تھی۔ یاد رہے کہ پاکستان 18 سال بعد ایک بار پھر اپنی سرزمین پر نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم کی میزبانی کرنے کے لیے پرعزم تھا ۔ مہمان ٹیم آئی سی سی ورلڈکپ 2019ء کی فائنلسٹ اور آئی سی سی رینکنگ میں پہلے نمبر پر براجمان ہے۔ دونوں ٹیموں کے مابین اب تک 107 ون ڈے کھیلے گئے جن میں سے 55 میں پاکستان جبکہ 48 میں نیوزی لینڈ نے کامیابی حاصل کی ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں