پروازیں چلانے کی تیاریاں مکمل،سعودی عرب نے فضائی پابندیاں ہٹانے کی تاریخ بتادی

ریاض(نیوز ڈیسک)سعودی حکومت کی جانب سے بین الاقوامی پروازوں پر کئی ماہ کی پابندی کے بعد بالآخر اگلے چند روز میں یہ پابندی ہٹنے جا رہی ہے۔ تاہم فی الحال پاکستان کے لیے پروازیں بحال نہیں کی گئی ہیں، جس کی وجہ پاکستان میں کورونا کیسز کی صورت حال بتائی جا رہی ہے۔ اُمید کی جا سکتی ہے کہ اگلے چند ہفتوں میں اس حوالے سے کوئی خوش خبری سُننے کو مل جائے۔فلائٹ آپریشنز بحال ہونے کے حوالے سے سعودیہ کی قومی فضائی کمپنی Saudia نے بتایاہے کہ رواں ماہ 17 مئی سے تمام ممالک کے لیے سفر کھول دیا جائے گا۔

العربیہ نیوز کے مطابق کمپنی کا کہنا ہے کہ وہ ہوابازی کے سیکٹر میں کام کرنے والا ایک ادارہ ہے ، فیصلوں کا اختیار اس کے پاس نہیں۔سعودی ایئرلائنز میں کارپوریٹ کمیونی کیشن کے امور کے ڈائریکٹر انجینئر عبداللہ الشہرانی نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو بتایا کہ مسافروں پر لازم ہے کہ وہ سفر سے قبل saudia.com کی ویب سائٹ سے ضروری معلومات حاصل کر لیں۔الشہرانی کے مطابق سعودیہ کے بیرون موجود مسافروں کو احتیاطی اقدامات اور وزارت صحت کی جانب سے عائد تقاضوں کا خیال رکھنا لازم ہو گا۔ مسافر کا "توکّلنا” ایپ میں اندراج لازم ہے۔الشہرانی نے زور دیا کہ جس کسی نے بھی کرونا کی ایک ویکسین لگوائی ہے وہ سفر کر سکتا ہے شرط یہ ہے کہ اس پہلی ویکسین کو 14 روز گزر چکے ہوں۔بین الاقوامی ہوابازی کو کھولنے کے حوالے سے سعودیہ کے انتظامات کے حوالے سے الشہرانی نے بتایا کہ سعودی ایئرلائنز کے طیاروں کو باقاعدگی کے ساتھ سینی ٹائز کیا جا رہا ہے۔اس مقصد سے الٹرا وائلٹ شعاوٴں کے ذریعے سینی ٹائزیشن کے واسطےUVC مشین کا استعمال کیا جا رہا ہے۔ یہ مشین بنیادی طور پر ہسپتالوں کے آپریشن تھیٹروں کو سینی ٹائز کرنے کے لیے ڈیزائن کی گئی۔ کارپوریٹ کمیونی کیشن ڈائریکٹر کے مطابق کْل 95 میں سے 71 مقامات کے لیے پروازیں چلانے کے لیے سعودیہ کی تیاری مکمل ہے۔ ان 71 میں سے 28 روٹس اندرون ملک اور 43 روٹس بیرون ملک کے ہیں۔سفر سے قبل بکنگوں کی منسوخی کے حوالے سے الشہرانی نے بتایا کہ مہمان مسافروں کو چاہیے کہ مقررہ تاریخ پر سفر نہ کرنے کی خواہش پر بکنگ کو منسوخ کرا دیں اور سفر کی نئی تاریخ کا فوری تعین کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں