جہانگیر ترین کی پیشی ، عدالت سے 1 مسلح شخص کو حراست میں لے لیا گیا

لاہور (نیوز ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء جہانگیر ترین کی پیشی کے موقع پر عدالت سے 1 مسلح شخص کو حراست میں لے لیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی رہنماء جہانگیر ترین اور ان کے صاحبزادے علی ترین لاہور کی بینکنگ کورٹ میں شوگر ملز میں جعلی بینک اکاؤنٹس کے کیس میں ضمانت میں توسیع کے لیے پیش ہوئے ، اس موقع پر پولیس نے عدالت سے ایک مسلح شخص کو حراست میں لے لیا۔بتایا گیا ہے کہ لاہورکی بینکنگ کورٹ کے احاطے سے تلاشی لینے کے دوران ایک شخص کے قبضے سے پستول ملی ، جس کی بناء پر پولیس نے عدالت میں

پستول لانے والے شخص کو گرفتار کر لیا ، جس کو تفتیش کے لیے نا معلوم مقام پر منتقل کردیا گیا۔پاکستان تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میرے خلاف ایک نہیں، 3 ایف آئی آرز درج ہیں، ایک سال سے چپ ہوں، ظلم بڑھتا جا رہا ہے، ملک کی 80 شوگر ملز میں سے انہیں صرف جہانگیر ترین نظر آیا، میں پوچھتا ہوں آخر یہ انتقامی کارروائی کیوں ہو رہی، وجہ کیا ہے ؟ میری وفاداری کا امتحان لیا جا رہا ہے۔جہانگیر ترین کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف سے انصاف مانگ رہے ہیں، میرے اور میرے بیٹے کے اکاؤنٹس منجمد کر دیئے گئے، اکاؤنٹ کیوں منجمد کیے، اس سے کیا فائدہ، کون کر رہا ہے ؟ وقت آگیا ہے کہ انتقامی کارروائی کو بے نقاب کیا جائے، تحریک انصاف میں شامل ہوں اور رہوں گا، میری راہیں تحریک انصاف سے جدا نہیں ہوئی ہیں۔راجہ ریاض نے کہا کہ عمران خان کے اعتماد کے ووٹ لینے میں سب سے زیادہ کردار جہانگیر ترین کا تھا، عمران خان نے جہانگیر ترین کی وجہ سے ہی اعتماد کا ووٹ لیا، وزیراعظم کے اردگر بیٹھے لوگ خرابیاں پیدا کر رہے ہیں، وزیراعظم اپنے اچھے کو دوست کو نہ کھوئیں۔

متعلقہ آرٹیکلز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button