ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والاکادھماکہ خیز اعلان

لاہور(نیوز ڈیسک)ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا نے کہا ہے کہ چیئرمین نیب سینیٹ کمیٹی میں پیش نہیں ہوئے تو ان کے وارنٹ جاری ہوسکتے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا نے کہا کہ نیب کی وجہ سے لوگ ملک چھوڑ کرچلے گئے ہیں۔اگر سب ڈاکو ہیں توپارلیمنٹ کو گھر بھیج دیا جائے۔پارلیمنٹ کواپنا احتساب خود کرنا چاہیے ۔ اگر نیب پر ہی انحصار کرنا ہے تو سارے ادارے بند کر کے نیب کو انچارج بنا دیں ۔ انہوں نےمزید کہا کہ سیاسی جماعتوں کی ناکامی ہےکہ وقت پرنیب ترمیم نہیں لائے۔ سینیٹ الیکشن کاشیڈول آئینی ترمیم

کےبعدہی تبدیل ہوسکتاہے، اپوزیشن جماعتوں کےاستعفے کوئی انہونی بات نہیں ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ سینیٹ الیکشن کا شیڈول آئینی ترمیم کے بعد ہی تبدیل ہو سکتا ہے جو قلیل عرصے میں ممکن نہیں ہے۔ سینیٹ الیکشن وقت پر ہوگا اسے کوئی تبدیل نہیں کر سکتا۔قومی احتساب بیورو کے معاملات پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بزنس مین کا نیب سے کیا لینا دینا، پراپرٹی کی خریدوفروخت کرو تو نیب کا نوٹس آ جاتا ہے۔ امپورٹ ایکسپورٹ کا کب سے نیب کا تعلق ہوگیا، عجیب عجیب باتیں سننے کو مل رہی ہیں۔ نیب کی وجہ سے لوگ ملک چھوڑ کر چلے گئے۔ سیاسی جماعتوں کی ناکامی ہے کہ وقت پر نیب ترمیم نہیں لے کر آئے۔ملک کی سیاسی صورتحال بارے ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے بھی ماضی میں استعفے دیے، ان کے استعفے پڑے رہے جو بعد میں انہوں نے واپس لیے۔ اپوزیشن جماعتوں کے استعفے دینا کوئی انہونی نہیں، یہ ان کا اپنا فیصلہ ہے۔ سیاسی جماعتیں اگر استعفے دیتی ہیں تو انہیں کوئی روک نہیں سکتا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں