وزیراعظم اور ان کی والدہ پر طنز، وفاقی وزیر نے مریم نواز کو دھمکی دے ڈالی

کراچی(نیوز ڈیسک)وزیراعظم اور ان کی والدہ پر طنز، وفاقی وزیر کی مریم نواز کو دھمکی۔ تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر فیصل واوڈا کی جانب سے مریم نواز کے ملتان جلسے کی تقریر پر شدید ردعمل دیا گیا ہے۔سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری کیے گئے پیغام میں فیصل واوڈا کا کہنا ہے کہ اگر اس چور کی بیٹی چورنی مریم نواز نے اپنی گھٹیا زبان وزیراعظم کی والدہ یا کسی اور کی والدہ کے لئے بند نہ کی تو ہم بھی مجبور ہونگے اس کے گھٹیا کچھے چٹھے کھولنے کے لئے جس سے یہ خود اور اس کا باپ خودکشی کرنے کے قابل بھی نہیں رہیں گے جس سیاست کے ہم خلاف ہیں۔

اس سے قبل ملتان میں پی ڈی ایم کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے مریم نواز نے نواز شریف کے والدہ کے جنازے میں شرکت نہ کرنے کے معاملے پر جوابی وار کرتے ہوئے وزیراعظم پر طنز کر ڈالا۔مریم نواز نے طنز کرتے ہوئے کہا کہ نواز شریف لندن میں کاونٹی کرکٹ کھیلنے میں مصروف نہیں ہیں جو مرتی ہوئی ماں کے پاس نہ آتے۔ ایک وزیر نے کہا کہ انہوں نے اپنی ماں کی میت کو پارسل کردیا ہے۔میں ان کو کہتی ہوں کہ نوازشریف جیسا بیٹا پورے پاکستان سے ڈھونڈ کرلاکر دکھاؤ، آخری وقت تھا تو میری دادی ان کی گود میں تھی، وہ دعائیں دیتی جان دے دی، لیکن وہ کاؤنٹی کرکٹ نہیں کھیل رہے تھے کہ وہ ماں کے پاس نہ پہنچ سکا؟ آپ سب جانتے ہو،نوازشریف پر آج پھر مشکل وقت ہے، شریف فیملی پر ایک اور قیامت ٹوٹی ہے، نوازشریف اور شہبازشریف کی ماں اللہ کو پیاری ہوگئی۔لیکن نوازشریف نے ٹیلی فون پر کہا کہ اپنے دکھوں کو گھر پر چھوڑ کرجانا، ہمارا دکھ چھوٹا، عوام کے دکھ بڑے ہیں۔نوازشریف نے مجھے کہا کہ ملتان کے عوام کے پاس جاکر اپنے دکھوں کا ذکر مت کرنا، کیونکہ تکلیف میں ہم ہیں اس سے زیادہ عوام تکلیف میں ہیں۔ عوام پر روز دکھوں اور غموں کے پہاڑ ٹوٹتے ہیں، ہم جانتے ہیں، کاروبار کو تالا لگ گیا، روٹی 30کی ، چولہے ٹھنڈے ہونے اور ادویات ، بجلی گیس کی قیمتیں پہنچ سے باہر ہوجانے کا غم ہے۔دوباتیں کروں گی ،اللہ کی قسم کھا کر کہتی ہوں،ان کا میرے غموں سے کوئی تعلق نہیں، کہتے ہیں دشمن بھی ظرف والا ہونا چاہیے، لیکن ہمیں دشمن بھی کم ظرف ملا، میری دادی کا

انتقال ہوا تو میں پشاور جلسے میں تھی، لیکن مجھے اڑھائی گھنٹے گزر گئے، مجھے جان بوجھ کر اطلاع نہیں دی گئی، جبکہ ان کو پتا تھا کہ انٹرنیٹ سروس بند ہے، میرے بھائی اور میرے بچے مجھے پاگلوں کی طرح فون کرتے رہے، جب میری ماں بسترمرگ پر تھیں، تو یہ پی ٹی آئی والے آئی سی یو کا دروازہ توڑ کر گھس گئے اور تصاویر بنائیں۔مریم نواز کا کہنا تھا کہ عوام کے گھروں میں غموں نےڈیرے ڈالےہوئےہیں، آج روٹی 30 روپے ہوجانے اور چولہے ٹھنڈے ہوجانے کاغم ہے، آج عوام کے روزگار چھن جانے، کاروبار کو تالا لگ جانے کا غم ہے، نواز شریف نے کہا عوام کےدکھوں پر

اپنےذاتی دکھ قربان کردینا کیوں کہ 22 کروڑعوام کے دکھ کےسامنے ہمارے دکھ کچھ نہیں، میں نے کہا جلسہ ہو یا نہ ہوعوام کے پاس ضرور پہنچوں گی، آپ نے ایک جلسہ گاہ کو بند کیا،ہر گلی میں جلسہ ہو رہا ہے، ہمارے نہتے کارکنوں کی گرفتاریاں ہو رہی ہیں، لیکن ملتان والو شاباش حکمرانوں کو مارمار کر بھگادیا ہے۔مریم نواز نے کہا کہ ہمارا المیہ یہ ہے ہمیں دشمن بھی ملا تو کم ظرف ملا، کیا کسی میں اتنی جرات ہےکہ مشرف کوپاکستان واپس لاسکے، کیا کوئی مشرف کوایک دن بھی جیل میں رکھ سکا، محترمہ بے نظیربھٹو کوشہید کیا جاتا ہے اور قاتلوں کوملک سے باہرفرار کرادیا جاتا ہے،

اکبر بگٹی کو قتل کیا جاتا ہے اوران کے اہل خانہ کوجنازہ پڑھنے کی جازت نہیں دی گئی، ذوالفقار علی بھٹوکی پھانسی کےبعد انکےخاندان کوجنازہ پڑھنے کی اجازت نہیں دی گئی۔مریم نواز کا کہنا تھا کہ اناڑی پاکستان کی ڈرائیونگ سیٹ پربیٹھا ہے، عمران خان نے پشاورمیں بی آرٹی بنائی جوچل کم اورجل زیادہ رہی ہے، علیمہ باجی نے سلائی میشن سے اربوں روپے کمالیے لیکن بندہ ایماندار ہے، بنی گالہ کا محل بن گیا لیکن بندہ ایماندار ہے، 6سال سے فارن فنڈنگ کیس میں مفرور، لیکن بندہ ایماندار ہے، جان بوجھ کرایل این جی کی ایمپورٹ میں تاخیر کی گئی لیکن بندہ ایماندارہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں