وینا ملک نے نواز شریف کوملٹری ڈاگ سے تشبیہہ دے ڈالی

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک)سیاسی پارہ آجکل نقطہ کھولاؤ پر پہنچا ہوا ہے اور تقریباً سبھی سیاسی جماعتیں میدان میں کودی ہوئی ہیں اور گھمسان کا رن پڑا ہے جس کے دفاع اور جارحانہ حکمت عملی کو سوشل میڈیا صارفین دو آتشہ کیے ہوئے ہیں۔لندن میں بیٹھی قیادت کی وضاحت مقامی سیاسی راہنما کر رہے ہیںاور ان کے مخالفین ان بیانات کو توڑ مروڑ کر پیش کرنے میں کو کمی اٹھا نہیں رکھتے۔دو روز قبل مریم نوازنے ماضی کے آپریشن ضرب عضب کے حوالے سے بات کرت ہوئے کہا تھا کہ تب بھی آرمی کی کمانڈ میاں نواز شریف نے کی تھی اور جنوبی وزیرستان اور ملک کے دیگر گوشوں میں موجود دہشتگردوں

کی کمر توڑ ڈالی تھی۔لہٰذا انہوں نے ایک طرح سے یہ کریڈٹ مسلح افواج کی بجائے نواز شریف کو دینے کی کوشش کی۔اپنی بات جاری رکھتے ہوئے مریم نواز نے کہا تھا کہ آپریشن ضربِ عضب کے پیچھے فوج، آگے نواز شریف تھے، آئین اور قانون کی عزت ہونی چاہیے انتقام نہیں ، احتساب ہونا چاہیے۔یہ بات انہوں نے مسلم لیگ ن کے پارلیمنٹیرینز، اراکین صوبائی اسمبلی، انتخابی امیدواروں اور کارکنوں سے دھواں دھار خطاب کرتے ہوئے کہی تھی۔وینا ملک جو کہ مسلم لیگ ن کے ناقدین میں شامل ہیں انہوں نے لیگی رہنما کے اس بیان کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے ایک تصویر شیئر کی جس میں فوجی جوان کسی سرچ آپریشن کے دوران ڈاگ سنفنگ کا عمل سر انجام دے رہے ہیں.اداکارہ نے ساتھ میں لکھا کہ واقعی "فوج پیچھے تھی وہ آگے تھا”.وینا ملک کے اس ٹویٹ کو قوٹ کر کے لیگی رہنما حنا پرویز بٹ نے لکھا کہ "نواز شریف کی بات ہو رہی تھی آپ کے والد کی نہیں تصویر تبدیل کرو”.جس کے جواب میں وینا ملک نے انہیں مخاطب کرنے کیلئے تضحیک آمیز الفاظ کا استعمال کرتے ہوئے اپنے موقف پر ڈٹے رہنا ہی مناسب سمجھااور ٹویٹ کرتے ہوئے لکھا کہ ”کھسرے غور سے دیکھ۔۔۔نانی اماں نے خود مانا ہے کہ اس کا باپ ہے“۔حنا پرویز بٹ اور وینا ملک کی ٹویٹر کی یہ لڑائی سوشل میڈیا صارفین میں لمبی بحث اختیار کر گئی اور کمنٹس کرنے والے صارفین نے بھانت بھانت کی باتیں کیں۔کسی نے وینا ملک کے خلاف بات کی کہ انہیں اپنے الفاظ کا خیال کرنا چاہیے تھا تو کسی نے ن لیگ کی قیادت اورمریم نواز کا خوب مذاق اڑایا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں