،ہم روزل اول سے متنبہ کررہے تھے کہ عمران نیازی کو بیرونی طاقتوں نے میدان میں اتارا ہے ،فضل الرحمن

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ ہم روزل اول سے متنبہ کررہے تھے کہ عمران نیازی کو بیرونی طاقتوں نے میدان میں اتارا ہے تاہم کوئی یقین نہیں کررہا تھا،اب پاکستان کے تین ٹکڑے اور فوج کے ٹوٹ جانے کی گولڈ سمتھ اینڈ کمپنی کی دلی خواہش کو وہ بالآخر اپنی زبان پر لے آئیں، جس سے ہماری دعوے کی تصدیق ہوتی ہے، ہم واضح کرنا چاہتے ہیں کہ یہ ملک عمران خان جیسے بیرونی طاقتوں کے پروردہ مسخروں کا نہیں ،22 کروڑ جانثاران اسلام کا ملک ہے۔اپنے بیان میں مولانا فضل الرحمن نے کہاکہ پاکستان کی قومی اور مذہبی جماعتوں نے پاکستان کو ایک زنجیر میں پھرو کر ناقابل تسخیر بنا دیا ہے۔ انہوںنے کہاکہ پاکستان کی مذہبی قوتیں اور بالخصوص جمعیت

علمائے اسلام پاکستان کے ٹکڑے کرنے والوں کے منہ توڑ کے رکھ دے گی۔انہوںنے کہاکہ عمران نیازی کے گولڈ سمتھ جیسے سرپرستوں کے پاکستان سے متعلق خواب کو ہم ہزار ٹکڑے کردیں گے تاہم پاکستان کی سلامتی اور آئینی رول تک محدود فوج کے وقار پر آنچ آنے نہیں دیں گے۔انہوں نے کہا کہ لگتا ہے کہ اقتدار سے محرومی کے بعد عمران نیازی مکمل طور پر ذہنی توازن کھو بیٹھے ہیں ، اب ان کی پارٹی کے کئی ٹکڑے ہونے والے ہیں،اس لئے وہ پاکستان کے تین ٹکڑے ہونے کے واہییات بکنے لگا ہے۔ پاکستان اور اس کی آئینی کردار تک محدود ہونے والی فوج کے خلاف غلیظ زبان استعمال کرنے سے بہتر ہے کہ وہ اپنے گولڈ سمتھ اور زیک سمتھ کے پاس لندن جاکر تین ماہرین نفسیات سے اپنی علاج کروائیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں