لانگ مارچ میں تشدد، پی ٹی آئی نے اقوام متحدہ سے رابطہ کر لیا

اسلام آباد (این این آئی)پاکستان تحریک انصاف نے حکومتی کریک ڈاؤن اور تشدد کے معاملے پر اقوام متحدہ کے متعلقہ ذمہ داران کو خصوصی مراسلے ارسال کر دیئے ۔جاری اعلامیہ کے مطابق خطوط انسانی حقوق کی سابق وفاقی وزیر اور کور کمیٹی کی رکن ڈاکٹر شیریں مزاریں کی جانب سے بھجوائے گئے۔ ڈاکٹر شیریں مزاری نے کہاکہ وزیراعظم عمران خان کی حکومت کو ہٹانے کی سازش کے بعد پاکستان ایک سیاسی بحران کا شکار ہوا، منی لانڈرنگ کے متعدد مقدمات میں ملوث اور ضمانت پر رہا ایک سیاستدان کو حزب اختلاف کی ان ساری جماعتوں کو اکٹھا کر کے اقتدار میں لایا گیا،اس سازش پر عوام نے شدید رد عمل کا اظہار کیا۔ شیریں مزاری نے کہاکہ جمہوریت کی بحالی اور پاکستان کی خودمختاری کے تحفظ کی تحریک کے تحت عمران خان کی جماعت نے ملک بھر میں بڑے جلسے منعقد کئے۔

انہوں نے کہاکہ اسٹیبلشمنٹ کی پشت پناہی سے حکومت نے عوامی احتجاج کا جواب جابرانہ اقدامات سے دیا، ڈاکٹر شیریں مزاری نے کہاکہ جلسوں کی ملک گیر لہر میں عمران خان نے حقیقی آزادی کیلئے پاکستان کے عوام کو وفاقی دارالحکومت کی جانب آذادی مارچ کی دعوت دی، وفاقی حکومت نے سندھ اور پنجاب کی صوبائی حکومتوں کے ساتھ مل کر ملک بھر میں کارکنان کے اور رہنماؤں کے خلاف کریک ڈاؤن کیا۔ سابق وزیر نے کہاکہ آزادی اظہار اور دیگر جمہوری حقوق کے آئینی تحفظ کے باوجود وفاقی و صوبائی حکومتوں نے انسانی حقوق پامال کئے،ملک بھرمیں تحریک انصاف کے کارکنان اور قائدین کے گھروں میں رات گئے چھاپے مار کر چادر چار دیواری کا تقدس پامال کیا گیا، کارکنان اور قائدین کی عدم گرفتاری کی صورت میں اہلخانہ خصوصاً خواتین کو دھمکایا گیا اور ہراساں کیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں