پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں مزید 30روپے فی لٹر اضافہ، مہنگائی کے ستائے عوام کے لیے ایک اور بُری خبر آگئی

اسلام آباد ( نیوز ڈیسک )حکومت کی اتحادی جماعت پیپلزپارٹی کے سینیٹر مصطفیٰ نواز کھوکھر نے عوام کو ایک اور بری خبر سنادی ۔ تفصیلات کے مطابق سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں مزید 30 روپے فی لٹر اضافہ متوقع ہے ، آئی ایم ایف شاید کیے گئے اضافہ سے مطمئن نہ ہو ، اس لیے سخت بجٹ بھی دینا پڑے گا۔پی پی سینیٹر نے کہا کہ سوال تو یہ ہے کہ عمران خان کی ناکامیوں اور ملک کو تباہی کے دہانے پر پہنچانے کا بوجھ اپنے سر لینے میں کیا حکمت ہے؟۔

خیال رہے کہ وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے پٹرول ، ڈیزل اور مٹی کے تیل کی فی لیٹر قیمت میں 30 روپے اضافے کا اعلان کیا ، حکومت کے فیصلے کے بعد پٹرول کی فی لیٹر قیمت 179 روپے 86 پیسے ، لائٹ اسپیڈ ڈیزل کی قیمت 148 روپے 31 پیسے ، ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت 174 روپے 15 پیسے اور مٹی کے تیل کی قیمت 155 روپے 56 پیسے ہو گئی۔ادھر ملک میں بہت جلد پیٹرول 200 اور ڈالر 225 روپے سے اوپر جانے کی پیش گوئی کردی گئی ، سابق وفاقی وزیر اور پی ٹی آئی کے رہنما فیصل واوڈا نے کہا ہے کہ ریکارڈ کا حصہ بنالیں بہت جلد ایک لیٹر پیٹرول کی قیمت 200 روپے سے زائدہوگی اور بہت جلد ڈالر 225 روپے سے اوپر ہوگا ۔انہوں نے کہا کہ ڈیڑھ ماہ میں ملک کا بھٹہ بٹھا دیا گیا ، اب پتا چلا ان کرداروں کو کہ امپورٹڈ حکومت صرف کرپشن کرنا جانتی ہے ، امپورٹڈ حکومت نے معاشی تباہی پھیر دی ، بتایا جائے کہ اس ظلم و بربریت کا قوم کو کون حساب دے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں