اگر آپ میں سیاسی قیمت ادا کرنے کی ہمت نہیں تو حکومت سے نکل جائیں،شاہد خاقان کا اعلیٰ قیادت کو مشورہ

اسلام آباد ( نیوز ڈیسک ) پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے اعلیٰ قیادت کو مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ اگر ہم سخت فیصلے نہیں لے سکتے تو ہمیں حکومت سے باہر ہو جانا چاہئیے۔انہوں نے سماء نیوز کے پروگرام ’ندیم ملک لائیو‘ میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اگر ہم فیصلے نہیں لے سکتے تو حکومت چھوڑ دیں،ایک دم چھوڑ دیں، آج اسی وقت چھوڑ دیں، اگر آپ میں سیاسی قیمت ادا کرنے کی ہمیت نہیں ہے تو حکومت سے نکل جائیں۔شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ سب کو ایک ٹیبل پر بٹھا کر مسائل بتانے ہوں گے اور مشکل فیصلے کرنے ہوں گے۔

انہوں نے نوازشریف کی واپسی سے متعلق سوال کے جواب میں کہا کہ ان کی بیماری کا علاج چل رہا ہے،حال ہی میں جب میں لندن گیا تو نوازشریف کی ڈاکٹرز کے ساتھ دو اپائٹمنٹس تھیں۔شاہد خاقان نےمزید کہا کہ لوڈ شیڈنگ صفر کی جاسکتی ہے لیکن اس کے لیے ہر ایک گھنٹے میں سوا سو ملین ڈالر چاہیے ، اگر ایک مہینے کے لیے ایک گھنٹہ لوڈ شیڈنگ کم کرنی ہے تو اس کے لیے سوا سو ملین ڈالر کی ضرورت ہے ، اگر آپ نے ڈالر بچانے ہیں تو پھر آپ کو ایک دو گھنٹے لوڈ شیڈنگ کرنی پڑے گی ۔سابق وزیر اعظم نے کہا کہ ہم حکومت میں ہیں اور ہمیں 4 ہفتے ہوئے ہیں حکومت کوشش کر رہی ہے جس کے لیے آپ کو پہلے حالات کو سمجھنا پڑتا ہے تاکہ آپ کو پتہ چلے کہ مسائل کیا ہیں ، اس دوران میں پٹرولیم مصنوعات اور بجلی کو بہت غور سے دیکھتا رہا لیکن آپ یقین کریں جو اصل حالات تھے وہ میرے اندازے سے بہت زیادہ برے تھے ، اس وقت پٹرول کی قیمت میں 47 روپے اور ڈیزل میں 90 روپے فی لٹر اضافے کی ضرورت ہے ، کیا آپ کرسکتے ہیں؟ کیا عوام پر یہ بوجھ ڈال سکتے ہیں؟ اس کے لیے تمام معاملات دیکھ کر فیصلے کرنے پڑتے ہیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں