بلوچستان اور کے پی کے میں بھی سرپرائز دیں گے،آصف زرداری

نوابشاہ (نیوز ڈیسک) سابق صدر اور پیپلز پارٹی کے شریک چئیرمین آصف علی زرداری کا کہنا ہے کہ سلیکٹڈ کو عوام کی طاقت سے بنی گالا واپس بھیج دیا۔اب ہم بلوچستان اور کے پی کے میں بھی سرپرائز دیں گے۔انہوں نے گوٹھ لعل بیروہی میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جب میں جیل میں تھا تو بھی بی بی شہید کہتی تھیں کہ آپ باہر نکل جائیں ، میں کہتا تھا کہ میری اتنی بڑی بڑی مونچھیں ہیں لوگ کہیں گے یہ کیسا مرد تھا جو اپنے بچوں کو چھوڑ کر بھاگ گیا۔آصف زرداری نے کہا کہ بلوچستان میں بڑے مسئلے ہیں اور کے پی کے میں بھی بڑے مسائل ہیں اور یہ سب افغانستان کی جنگ کے اثرات ہیں۔
انہوں نے مزید کہا کہ جب صدر تھا تو پاکستان کو امیر ملک بنا رہا تھا اور مجھے امید ہے کہ میں اب انشاءاللہ دوبارہ پاکستان سے غربت کا خاتمہ کرکے ہر فرد کو امیری کی طرف لے کر جاؤں گا۔سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا کہ ہم پہلا معرکہ مار چکے ہیں اور اب دوسرے معرکوں میں کامیابی حاصل کریں گے۔ہمیں 50 فیصد کامیابی حاصل ہوئی ہے اور اب ہم بلوچستان میں تبدیلی لے کر آئیں گے اور اس کے بعد خیبرپختونخوا میں بھی پیپلز پارٹی کی حکومت بنے گی۔جبکہ نوابشاہ میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے آصف زرداری نے یہ بھی دعویٰ کیا ہے کہ ہمارے پاس اتنی صلاحیت ہے کہ ڈالر کا ریٹ پانچ روپے پاکستانی کے مساوی ہونا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ سی پیک منصوبہ اس لیے شروع نہیں کیا کہ چھوٹی سڑکیں اور ٹرام بنالوں۔ انہوں نے مزید کہا کہ میرے لوگوں نے مجھے بہت کچھ دیا ہے، صدربنا تو بلوچستان کے غم بہت کم کیے لیکن بلوچستان اورخیبرپختونخوا میں اب بھی بہت سے مسائل ہیں۔ آصف زرداری نے کہا کہ میں آپ لوگوں کے سامنے سرخرو ہوا، اگر بھاگ جاتا تو اپ کہتے اچھا تووہ تم ہو جو لندن میں رہتے تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں