کیا صحت کارڈ کو بند کیا جارہا ہے؟وفاقی وزیر صحت قادر پٹیل نے اہم اعلان کردیا

کراچی (نیوز ڈیسک) وفاقی وزیر صحت قادر پٹیل نے کہا ہے کہ وڈیوز آنے سے پہلے ہی ان کا دفاع شروع کردیا گیا ہے ۔انہیں معلوم ہے کہ جو وڈیوز آنی ہیں وہ غیر اخلاقی ہیں ۔مہنگائی پر قابو پانا اس حکومت کے لیے سب سے بڑا چیلنج ہے ۔اس نمٹنے کے لیے جلد حکمت عملی بنائیںگے۔ادویات کی قیمتوں میں اضافے کی سمری میرے پاس آئی تھی میں نے اس کی مخالفت کی ہے ۔صحت کی سہولیات کے حوالے سے صوبہ سندھ باقی صوبوں سے بہت بہتر ہے ۔صحت کارڈ کو بند نہیں کیا جارہا ہے تاہم اس میں موجود خامیوں کو دور کیا جائے گا ۔ان خیالات کا اظہار انہوںنے جمعہ کو کراچی پریس کلب میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

عبدالقادر پٹیل نے کہا کہ سیاسی اتارچڑھاؤ آتا رہتا ہے لیکن میراصحافیوں سے تعلق ہمیشہ رہے گا۔کراچی پریس کلب میرے لئے بیگانہ نہیں ہے ۔کراچی پریس کلب زمانہ طالب علمی سے ایک درس گاہ کی حیثیت رکھتا ہے ۔صحافیوں میں سے میرے بہت سے اساتذہ بھی ہیں ۔کراچی پریس کلب سے گہرا رشتہ ہے ۔کراچی میرا اپنا شہر ہے ۔مجھے پارٹی قیادت نے جوذمہ داری دی ہے اس نبھانے کی بھرپور کوشش کررہا ہوں ۔صحت کے حوالے سے صحافیوں کو جو مسائل درپیش ہیں اس میں جو مدد ہوسکتی ہے وہ کی جائے گی ۔انہوںنے کہا کہ سابق حکومتوں کی ناقص پالیسیوں کی وجہ سے مہنگائی میں اضافہ ہوا ہے ۔ہمارے لیے مہنگائی پر قابو پانا سب سے بڑا چیلنج ہے ۔ہمارے ہاں جب ایک چیز کی قیمت بڑھ جاتی ہے تو وہ کم نہیں ہوتی ہے تاہم اس چیلنج سے نمٹنے کے لیے جلد حکمت عملی مرتب کی جائے گی ۔انہوںنے کہا کہ ادویات کی قیمتوں میں اضافے کی سمری میرے پاس آئی تھی میں نے اس کی مخالفت کی ہے۔یہ سمری کابینہ منظور کرتی ہے ۔قادر پٹیل نے کہا کہ ہم حسد ،بغض اور کینہ لے کر کسی کے پیچھے نہیں پڑھتے ہیں۔صحت کارڈ کو ہم بند نہیں کررہے ہیں۔اس میں خامیاں بہت ہیںان کو دور کیا جائے گا ۔صحت کارڈ امیر ترین انسان کے پاس بھی موجود ہے ۔اپنے قلمدان پر اعتراض کے حوالے سے سوال کا جواب دیتے ہوئے قادر پٹیل نے کہا کہ جب پرویز خٹک کو وزیر دفاع بنایا گیا تھا تو ہم نے اعتراض نہیں کیا تھا ۔میرا کام انتظام امور دیکھنا ہے ۔میں نے یہ کب کہا ہے کہ میں سرجری کروںگا۔انہوںنے کہا کہ سندھ کے تین

اسپتالوں کے بارے میں وفاقی حکومت کہتی رہی ہے کہ وہ اس کے زیر کنٹرول ہیں ۔بلاول بھٹوزرداری خود اس معاملے کو دیکھ رہے ہیں ۔انہوںنے کہا کہ اسپتالوں میں حیات آباد پشاور کے اسپتال کی حالت سب سے زیادہ خراب ہے ۔کسی بھی صوبے میں صورت حال بہتر نہیں لیکن سندھ باقی تمام صوبوں سے بہت بہتر ہے ۔

متعلقہ آرٹیکلز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button