بیرون ملک مقیم پاکستانی ان چور حکمرانوں کو اپنی توہین سمجھتے ہیں،عمران خان

اسلام آباد(نیوز ڈیسک ) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ بیرون ملک مقیم پاکستانی ان چور حکمرانوں کو اپنی توہین سمجھتے ہیں ، امپورٹڈ حکومت ہم پر مسلط کی گئی ہے ‘ جس کی 60 فیصد کابینہ ضمانت پر ہے ، امریکہ اور پوری دنیا میں لوگ ان کے خلاف نکلے ہوئے ہیں ‘ ان کو اندازہ نہیں لوگوں کو ان پر کتنا غصہ ہے ، اب عوامی رائے کو کنٹرول نہیں کیا جاسکتا ۔تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ شہباز شریف ڈرپوک اور ظالم شخص ہے جس نے پولیس مقابلوں میں لوگ مروائے ، آدھے عوام کو ہمارے ساتھ ان کی شکل

دیکھ کر نکل رہے ہیں ، اسلام آباد کی کال دی ہے یہ پاکستان کی سب سے بڑی تحریک ہوگی ، سندھ میں زرداری سسٹم نے عوام کو غلام بنایا ہوا ہے ، اب ہماری عدالتوں کا بھی امتحان ہے۔ عمران خان نے کہا کہنیب کے اندر ڈی جیز تبدیل ہوں گے پراسیکیوٹرز تبدیل ہوں گے ، شہباز شریف نے تمام کیسز کا ریکارڈ اپنے پاس رکھ لیا ، خدشہ ہے کہ یہ ریکارڈ غائب کردیا جائے گا ، ان کی بہت ساری پراپرٹیاں ابھی سامنے نہیں آئیں ، یہ ملک کو دوبارہ لوٹیں گے اور پیسے باہر بھیجیں گے ، مشرف نے این آر او دے کر ملک کا نقصان کیا ، ہم نے اپنے دور حکومت میں ان کے خلاف کوئی کرپشن کیسز دائر نہیں کیے، شہبازشریف کیخلاف ایف آئی اے نے صرف مقصودچپڑاسی والا کیس درج کیا ، ن لیگ اور پیپلزپارٹی کی حکومتیں2،2بار کرپشن پر نکالی گئیں، اس لیے پتہ چلنا چاہیے کہ مشرف کے این آر او سے ملک کو کتنا نقصان ہوا۔سابق وزیراعظم نے کہا کہ ان کی لوٹ مار کی وجہ سے ملک خسارے میں گیا ، نواز شریف کو سزا ہو چکی ہے، سزا سے بچنے کے لیے ملک سے باہر بھاگے ہیں ، حسن نواز ان کے دور میں بیرون ملک فرار ہوئے ہیں ، جب ان سے سوال ہوا تو انہوں نے کہا کہ ہم پاکستان کے شہری نہیں ہیں ، ملک کا 3 بار وزیر اعظم رہنے والے کے بیٹے کہتے ہیں ہم پاکستانی نہیں ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ پانامہ پیپرز میں انکشافات کے علاوہ بھی چھپی پراپرٹیز ہیں ، 40 سے 45 ارب کے 16 کیسز ہیں جن کا فیصلہ ہوچکا ہے ، یہ وہ خاندان ہے جس نے ملک کو 30 سالوں سے لوٹا ہے ، 16ارب روپے

کے ایف آئی اے میں کیسز ہیں ، انہوں نے اپنے نوکروں کے ناموں پر پیسہ لیا ، مقصود چپڑاسی کے نام پر اربوں روپے بیرون ملک بھیجا ، اس کیس کے افسران کے تبادلے کردئیے گئے ہیں ، پراسیکیوٹر کو عدالت جانے سے منع کردیا ۔چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ جعلی ناموں پر یہاں سے پیسہ چوری کرکے بیرون ملک بھیجا گیا ، انہوں نے سارا ریکارڈ خود لے لیا ہے ، خدشہ ہے کہ یہ لوگ ریکارڈ غائب کیا جائے گا ، ان کے اوپر 4 نیب کیسز ہیں ، والد وزیر اعظم ضمانت پر ہے بیٹا وزیر اعلیٰ وہ بھی ضمانت پر ہے ، ہمارے دور میں نیب آزاد ادارہ تھا وہاں یہ کیسز چل رہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ ان کے دورمیں 15 فیصد توشہ خانہ کو جاتا تھا ، آصف زرداری نے توشہ خانہ سے تین بلٹ پروف گاڑیاں نکلوائیں ، نواز شریف نے دس سال بعد ایک گاڑی کو قانونی کروالیا ، ہمارے دور میں توشہ خانہ کو 50 فیصد جاتا تھا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں