ترین گروپ کو مائنس عثمان بزدار کے مطالبے سے دستبراد کروانے کے لیے حکومتی ٹیم میدان میں آ گئی

لاہور(نیوز ڈیسک)پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے جہانگیر ترین گروپ سے تعلق رکھنے والے اپنے ہی ناراض لوگوں کو منانے کا مشن جاری ہے۔ترین گروپ کو مائنس عثمان بزدار کے مطالبے سے دستبراد کروانے کے لیے حکومتی ٹیم میدان میں آ گئی۔میڈیا رپورٹس کے مطابق پنجاب کے وزیر تعلیم مراد راس نے ترین گروپ کے نعمان لنگڑیال اور عبدالحئی دستی سے ملاقات کی۔اس ملاقات میں ترین گروپ کے تحفظات اور شکایت پر عمل درآمد کا جائزہ لیا گیا۔ترین گروپ کو ترقیاتی منصوبوں کے لیے فنڈز فراہم کرنے کی یقین دہانی کروائی گئی۔مراد راس کا ملاقات کے دوران وفاقی وزیر پرویز خٹک سے بھی رابطہ ہوا ہے

جس کے دوران ترین گروپ کے اراکین نے پرویز خٹک کو وفاقی محکموں کے حوالے سے تحفظات پر بھی آگاہ کیا۔حکومتی اراکین کی ترین گروپ کا مائنس بزدار کے مطالبے سے دستبردار کروانے کی کوشش جاری ہے۔ترین گروپ کا کہنا ہے کہ جہانگیر ترین اور دوسرے اراکین کے مشورے کے بغیر کوئی قدم نہیں اٹھا سکتے۔ ترین گروپ اور حکومتی ٹیم کے درمیان 48 گھنٹوں میں ایک اور ملاقات کا فیصلہ کیا گیا۔قبل ازیں ں ڈاکٹر مراد راس نے کہا کہ ترین گروپ تحریک انصاف کا اہم حصہ ہے، اس کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کیے جائیں گے جب کہ اگلے 24 گھنٹوں میں ترین گروپ سے اہم ملاقات کی جائے گی۔مراد راس نے کہا کہ وزیراعلیٰ عثمان بزدارکو ترین گروپ کے ممبران کے تحفظات سے آگاہ کردیا ہے۔صوبائی وزیر تعلیم کا کہنا تھا کہ سیاسی جماعتوں کے ممبران کے مابین اختلاف رائےمضبوط جمہوری نظام کا عکاس ہے، اندرونی مسائل دیرینہ نہیں، انہیں جلد حل کرلیں گے ۔ذرائع کےمطابق ایوان وزیر اعلیٰ نے ترین گروپ کے مسائل حل کرنے کیلئے متعلقہ اضلاع کے افسران کو ہدایات بھی جاری کردی ہیں جس میں افسران سے کہا گیا ہے کہ ترین گروپ کے علاقوں میں زیر تکمیل کاموں سے بھی آگاہ کیا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں