تحریک عدم اعتماد، نواز شریف کی وطن واپسی کی خبر آگئی

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)پاکستان مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنماء میاں جاوید لطیف نے دعویٰ کیا ہے کہ قوم نوازشریف کو آئندہ چند دنوں میں پاکستان میں دیکھے گی، نوازشریف نے اپنا مقدمہ اللہ کی عدالت پر چھوڑا تھا، آج اللہ کا انصاف ہوتا دیکھیں، اللہ کے ہاں دیر ہے اندھیر نہیں۔ جیونیوز کے مطابق مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنماء میاں جاوید لطیف کا کہنا ہے کہ شیخ رشید آج گورنر راج لگانے کی باتیں کررہا ہے، اب ان کے ہاتھ سے یہ وقت بھی نکل چکا ہے، گورنر راج، اسمبلیاں توڑنا اور صدارتی نظام اب ماضی کے قصے ہوگئے ہیں۔انہوں نے دعویٰ کیا کہ قوم نوازشریف کو آئندہ چند دنوں میں پاکستان میں دیکھے گی،

نوازشریف نے اپنا مقدمہ اللہ کی عدالت پر چھوڑا تھا، آج اللہ کا انصاف ہوتا دیکھیں، اللہ کے ہاں دیر ہے اندھیر نہیں۔ واضح رہے وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید نے وزیراعظم کو سندھ میں گورنر راج نافذ کرنے کا مشورہ دیا ہے۔ انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سندھ کے لوگوں کے پیسوں کو 20،20 کروڑ کو خریدوفروخت کیلئے استعمال کیا جارہا ہے، میں نے عمران خان کو مشورہ دیا ہے کہ سندھ حکومت نے جو خریدوفروخت کی ہے ہمیں سندھ میں گورنر راج نافذ کردینا چاہیے۔کیونکہ یہ جمہوریت کے خلاف سازش ہے۔ دوسری جانب تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی رمیش کمار نے دعویٰ کیا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کو چاہیے کہ اب فوری استعفیٰ دے دیں، کیونکہ تین وفاقی وزراء سمیت 33 ممبران اسمبلی اڑ چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ غلط کاموں کی نشاندہی ہمیشہ کرتا رہا ہوں اور ایک وفاقی وزیر مزید چھوڑنے والا ہے۔ پارلیمنٹ لاجز میں میری بیوی کو دھمکیاں دی گئیں، وزیراعلیٰ سندھ سے تحفظ کی درخواست کی۔مزید برآں ہم نیوز کے مطابق پی ٹی آئی رکن اسمبلی راجہ ریاض نے اپنے بیان میں کہا کہ پوری قوم کو پتہ ہے پولیس کے ذریعے لاجز پر حملہ کرایا گیا، ہمارے ارکان پر تشدد کیا گیا تھانے لے گئے، محسوس کیا جو واقعہ لاجز میں ہوا وہ ہمارے ساتھ بھی ہوسکتا ہے، 2 درجن سے زائد ارکان قومی اسمبلی ہمارے ساتھ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کسی نے کوئی پیسہ نہیں دیا،ہم نے ووٹ ضمیر کے مطابق دینا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ پی ٹی آئی کے راجہ ریاض، باسط سلطان راجہ اور نورعالم خان بھی سندھ ہاوس میں قیام پذیر ہیں۔

پی ٹی آئی ایم این اے باسط سلطان بخاری کا کہنا ہے کہ تحریک انصاف حکومت سے کوئی وزارت نہیں مانگی،ایک منصوبہ تھا جو اپنی سربراہی میں مکمل کرنے کا کہا، حکومت نے ساڑھے تین سالوں میں کچھ نہیں کیا۔ احمد حسین ڈیہڑ نے کہا کہ اپنی مرضی سے آئے ہیں حکومت کا پیسوں کا الزام جھوٹ ہے، چند ماہ قبل ملتان میں ریسکیو 1122 کو40 کروڑ کی زمین عطیہ کی، ہم پیسے لے کر بکنے والے نہیں۔نور عالم خان نے کہا کہ ہم لائے نہیں گئے خود آئے ہیں، لوڈشیڈنگ یا کرپشن کے خلاف آواز اٹھائی تو کہا گیا کیا آپ پیپلزپارٹی میں ہو، میرے حلقے میں گیس نہیں آتی کوئی بات سننے والا نہیں۔ اسی طرح تحریک انصاف کے ایم این اے نواب شیروسیر نے اگلا الیکشن تحریک انصاف کے ٹکٹ پر نہ لڑنے کا اعلان کردیا ہے۔ نواب شیروسیر نے حکومت کے خرید و فروخت کے الزام کو بھی مسترد کردیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ فواد چودھری کو جھپی ڈال کر پارلیمنٹ کے اندر جائیں گے۔

متعلقہ آرٹیکلز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button