سرکاری سکول میں 8 اساتذہ اور 2 ملازمین میں کورونا وائرس کی تصدیق

نوشہرہ (مانیٹرنگ ڈیسک) نوشہرہ میں سرکاری سکول میں 8 اساتذہ اور 2 ملازمین میں کورونا کی تصدیق ہوگئی ۔ ڈپٹی کمشنر کے مطابق کورونا وائرس کی تصدیق سرکاری سکول رشکئی کے 8 اساتذہ اور 2ملازمیں میں ہوئی جس کے بعد کورونا وائرس میں مبتلا تمام اساتذہ اور ملازمین کو 15روز کیلئے گھر بھیج دیا گیا ہے جبکہ دیگر تعلیمی اداروں میں کورونا ایس او پیز کے تحت تدریسی عمل جاری ہے ۔ادھر صوبہ سندھ میں بھی تعلیمی ادارے کھلتے ہی 2 کالجز کے 8 ممبران کورونا وائرس کا شکار ہوگئے ۔ صوبائی وزیر تعلیم سندھا سعید غنی نے تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ حیدر آباد کے ڈسڑکٹ مٹیاری کے

دو کالجز میں عملےکے 8 افراد میں کورونا کی تشخیص ہوئی ، کورونا وائرس کے کیسز آنے کے بعد دونوں کالجز کو عارضی طور پر بند کر دیا گیا ۔دوسری طرف کورونا کے باعث ملک بھر میں 22 تعلیمی ادارے بند کردیے گئے ۔تفصیلات کے مطابق سب سے زیادہ 16 تعلیمی ادارے خیبر پختونخوا میں بند کیے گئے جبکہ 5 آزاد کشمیر اور ایک تعلیمی ادارہ اسلام آباد میں بند کردیا گیا ۔ این سی او سی کے مطابق یہ تمام ادارے 48 گھنٹوں میں ایس او پیز اختیار نہ کرنے پر بند کیے گئے کیونکہ احتیاطی تدابیر اختیار نہ کرنے پر ان اداروں میں کورونا وبا پھیلی ۔ یاد رہے کہ کورونا کیسز میں کمی کے بعد ملک بھر میں 6 ماہ بعد تعلیمی ادارے 15ستمبر کو کھولے گئے ، پہلے مرحلے کے آغاز میں میٹرک کلاسز، کالجز اور یونیورسٹیز میں تدریسی عمل جاری ہے ۔تعلیمی اداروں میں ہینڈ سینی ٹائزر، ماسک، اور فاصلہ برقرار رکھنے کیلئےخصوصی انتظامات کئے گئے ۔ نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرل سینٹر نے اس حوالے سے ایس او پیز جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ والدین بچوں کو ماسک پہنا کر بھیجیں۔ کھانسی یا بیماری کی صورت میں طلبا کو ہرگز سکول نہ بھیجیں۔ اگر طبیعت زیادہ خراب ہو تو فوری ٹیسٹ کروایا جائے۔ ہاتھ با قاعدگی سے دھوتے رہیں۔ بچے کا کورونا ٹیسٹ مثبت آنے کی صورت میں تعلیمی ادارے کو مطلع کیا جائے۔ سکول وینز کے ڈرائیور بھی اپنی گاڑیوں میں سماجی فاصلہ یقینی بنائیں گے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.