پاکستان کے اہم ترین شہر میں دھماکہ، متعدد دکانیں تباہ ہوگئیں 

کراچی(نیوز ڈیسک) کراچی میں محمود آباد گیٹ کے قریب نالے میں گیس بھرنے سے دھماکا ہو گیا۔گیس بھرنے سے ہونے والے دھماکے کے نتیجے میں 3 افراد زخمی ہو گئے جنہیں فوری طور پر جناح اسپتال کراچی منتقل کیا گیا۔پولیس کے مطابق زخمیوں کی بلال، دلاور، جوہن کے نام سے شناخت ہوئی ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق دھماکے کی وجہ سے متعدد دکانیں بھی تباہ ہوئیں۔یاد رہے کہ گذشتہ ہفتے ہی کراچی کے علاقے شیر شاہ کے پراچہ چوک پر ایک عمارت میں ہونے والے دھماکے کے نتیجے میں عمارت زمین بوس ہوگئی تھی، دھماکا ایک نجی بینک میں ہوا جس کی شدت اس قدر زیادہ تھی کہ عمارت کے پلرز اکھڑ گئے،

زوردار دھماکے سے قریبی واقع پیٹرول پمپ کے علاوہ متعدد گاڑیوں اور موٹر سائیکوں کو بھی نقصان پہنچا ، کراچی شیرشاہ دھماکے کی بم ڈسپوزل اسکواڈ کی جانب سے ابتدائی رپورٹ جاری کی گئی جس کے تحت شیرشاہ میں نالے پر قائم بینک عمارت میں دھماکا ہوا، سیوریج لائن میں گیس کے اخراج کے باعث دھماکا ہوا، دھماکے سے عمارت کو شدید نقصان پہنچا۔علاقے کے اسٹیشن ہاؤس افسر (ایس ایچ او) ظفرعلی شاہ نے بتایا کہ بینک کی عمارت نالے پر تعمیر تھی جنہیں کچھ عرصے قبل نوٹس دیا گیا تھا کہ نالے کی صفائی کے لیے بینک کو خالی کردیں ، دھماکے کے فوری بعد علاقہ مکین اور ریسکیو ٹیمز جائے وقوع پر پہنچ گئے اور زخمیوں کو ابتدائی طبی امداد کے لیے قریبی ہسپتال منتقل کیا گیا ، گورنر سندھ عمران اسمعیل اور وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے واقعے کی رپورٹ طلب کرلی ہے۔ادھر تحریک انصاف کے رکن سندھ اسمبلی خرم شیر زمان نے اس خبر کی تصدیق کی ہے کہ کراچی شیر شاہ دھماکے میں پی ٹی آئی رکن قومی اسمبلی عالمگیر خان کے والد بھی جاں بحق ہوگئے ہیں، عالمگیرخان کے والد کراچی کی کاروباری شخصیت ہیں،وہ ہیوی ڈیوٹی مشینری کا کاروبار کرتے تھے، جب دھماکا ہوا اس وقت وہ کسی ٹرانزیکشن کے سلسلے میں بینک میں موجود تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں