کل بیت اللہ کے عین اوپر کیا ہونیوالاہے، کرڑوں مسلمان کیا فائدہ حاصل کرسکیں گے، بڑی خبر

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)سعودی عرب کے فلکیاتی ادارے نے کہا ہے کہ پیر 14 ستمبر کو چاند خانہ کعبہ کے عین اوپر ہوگا جس کو دیکھ کر دور دراز کے لوگ بیت اللہ کی درست سمت معلوم کرسکیں گے۔جدہ میں فلکیاتی علوم کی سوسائٹی کے ڈائریکٹر انجینئر ماجد آل زاہرہ نے سعودی نشریاتی ادارہ العربیہ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ 14 ستمبر کو سورج طلوع ہونے کے چند گھنٹے بعد چاند خانہ کعبہ کے عین اوپر ہو گا۔ یہ رواں سال چاند کے خانہ کعبہ کے اوپر آنے کا چوتھا موقع ہو گا۔انجینئر ماجد نے بتایا کہ پیر کی صبح 09:33:54 پر چاند مکہ مکرمہ کے افق پر 895840 ڈگری کی اونچائی پر ہو گا۔ اس موقع پر چاند 13.7% روشن ہو گا اور سورج سے اس کا فاصلہ

373958 کلو میٹر ہو گا۔انجینئر ماجد کے مطابق اس موقع پر عملی طور پر آسان طریقے سے قبلے کی سمت کا تعین کیا جا سکتا ہے۔ دور دراز رہنے والے افراد اپنے مقامات پر رہتے ہوئے چاند کو دیکھ کر بیت اللہ کی درست سمت معلوم کر سکتے ہیں۔علاوہ ازیں 14 ستمبر کو طلوع آفتاب سے چند گھنٹے قبل مہینے کے اواخر کا چاند زہرہ سیارے کے ساتھ جوڑی کی حالت میں ہو گا۔ اس شان دار منظر کو انسانی آنکھ سے دیکھا جا سکے گا۔جدہ کی فلکیاتی علوم کی سوسائٹی کے سربراہ کے مطابق چاند اور زہرہ آسمان میں سورج کے بعد بالترتیب دوسرے اور تیسرے روشن ترین اجسام ہیں۔ لہذا انہیں صبح کی روشنی کے آغاز کے ساتھ ہی ایک خوب صورت منظر میں دیکھا جا سکے گا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.