کورونا کی اب تک کی سب سے خطرناک قسم پھیلنے کا انکشاف،نئی سفری پابندیاں عائد

ریاض(نیوز ڈیسک) سعودی عرب نے 7 ممالک سے پروازوں کی آمد و رفت پر پابندی عائد کر دی، افریقا میں کورونا کی نئی قسم پھیلنے کے بعد 7 جنوبی افریقی ممالک پر فوری سفری پابندیاں عائد کر دی گئیں۔ غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق جنوبی افریقی ممالک میں کورونا وائرس کی نئی قسم کے تیزی سے پھیلنے کا انکشاف ہوا ہے۔ غیرملکی میڈیا کے مطابق صورتحال پر غور کے لیے عالمی ادارہ صحت نے ہنگامی اجلاس بلالیا ہے۔اس صورتحال میں دنیا کے کئی ممالک نے ہنگامی اقدامات شروع کر دیے ہیں۔ سعودی عرب نے بھی اس صورتحال میں فوری اہم فیصلہ لیتے ہوئے 7 جنوبی افریقی ممالک پر سفری پابندیاں عائد کر دی ہیں۔

سعودی حکومت نے افریقہ کے 7 ممالک سے پروازوں کی آمد و رفت پر پابندی عائد کی ہے۔ان ممالک میں جنوبی افریقہ، نمیبیا، بوٹسوانا، ایسواتینی، زمبابوے، مزمبیق شامل ہیں۔دوسری جانب یورپی ممالک نے بھی فوری طور پر مذکورہ ممالک سے پروازوں کی آمد و رفت بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ یورپی یونین کے 27 ممالک نے متفقہ فیصلہ کیا کہ جن جنوبی افریقی ممالک میں کورونا کی نئی قسم پھیلنے کا انکشاف ہوا ہے، ان پر سفری پابندیاں عائد کر دی جائیں۔ دوسری جانب غیر ملکی میڈیا کے مطابق ہنگامی طور پر عائد کی گئی نئی سفری پابندیاں مارکیٹ میں خوف اور غیر یقینی کی صورتحال پیدا کرنے کا باعث بنی ہیں۔جنوبی افریقی ممالک میں کورونا وائرس کی نئی قسم پھیلنے کے انکشاف کے بعد عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتیں 12 فیصد گر گئیں، جبکہ یورپی اسٹاک مارکیٹس میں بدترین مندی دیکھی جا رہی ہے۔ بتایا گیا ہے کہ عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں ڈیڑھ سال کے دوران سب سے بڑی یومیہ گراوٹ دیکھنے میں آئی ہے، خام تیل کی قیمتیں میں 12 فیصد گر گئیں۔امریکی خام تیل کی قیمت میں 7 ڈالر فی بیرل سے زائد کی کمی ہوئی جس سے فی بیرل قیمت 70 ڈالر کی سطح سے نیچے آگئی۔ برینٹ خام تیل کی قیمت میں بھی 8 ڈالر سے زائد کی کمی ہوئی ہے جس سے فی بیرل قیمت 73 ڈالرز کی سطح تک گر گئی۔ عالمی میڈیا کے مطابق خام تیل کی قیمتوں میں یہ کمی اپریل 2020ء کے مقابلے میں سب سے بڑی کمی ہے جو کہ ڈیڑھ سال بعد ہوئی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں