پاکستان میں سب سے زیادہ ’ٹھرکی‘ سیاستدان ہیں، حریم شاہ کے انکشافات

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) معروف ٹک ٹاکر حریم شاہ نے حال ہی میں دیے گئے انٹرویو میں کئی اہم انکشافات کیے ہیں۔ ٹک ٹاک اسٹار حریم شاہ نے کہا ہے کہ میرا کوئی پیشہ نہیں ہے کیونکہ جو میں کرنا چاہتی تھی وہ آج تک نہیں کیا۔،میرے پیچھے کوئی نہیں ہے بلکہ میرا اپنا سایہ ہے۔انٹرویومیں انہوں نے کہا کہ میں بے باک نڈر ہے ہوں،دوسروں کے حکم اپنے اوپر صادر ہونے نہیں دیتی ،میں نہیں چاہتی میرے اوپر کوئی اور مسلط ہو، لوگ جوبھی بولیں جیسا سوچیں اسے کوئی فرق نہیں پڑتا۔حریم شاہ نے ٹک ٹاک ویڈیوز بنانے کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ میں ہاسٹل میں تھی میرا تعلق بہت سادہ

زندگی گزارنے والے گائوں سے ہے ،میں اپنے خاندان کی واحد لڑکی تھی جسے ہاسٹل تک جانے کی اجازت ملی۔ہاسٹل میں ایک دن ایک دوست نے ایک ایپ کا بتایا جس پر ویڈیو بناتے ہیں ،اس وقت مجھے ویڈیو بنانی آتی بھی نہیں تھی، پھر ایسے ہی ویڈیوز بنانا شروع کی تو ویڈیوز پر محبت بھی ملی تنقید بھی ہوئی اسی تنقید سے شہرت بھی ملی ۔حریم شاہ نے بتایا کہ سب سے پہلے مجھے دبئی کی ایک کمپنی نے اپنا برانڈ امبیسڈر بنایا اور وہاں میری پہلی تنخوا 6 لاکھ روپے تھی لیکن اب 6 لاکھ بہت کم ہیں۔حریم شاہ نے اپنی دوست اور اکثر ان کے ساتھ ویڈیوز میں نظر میں آنے والی لڑکی صندل خٹک کے بارے میں بتایا کہ صندل ڈرنے والی لڑکی ہے فوراًڈر جاتی ہے میری وجہ اسے پریشانی ہوجاتی ہے لیکن میرے بہت سے دوسرے دوست ہیں جو آستین کے سانپ ہیں۔حریم شاہ نے سیاستدانوں کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں سب سے زیادہ ٹھرکی سیاستدان ہی ہیں اور اسی وجہ سے وہ اوپر بیٹھے ہیں۔انہوں نے کہا کہ سیاستدانوں کو اپنی عزت اورذمہ داریوں کا احساس تک نہیں ہوتا اور نہ ہی عوام کا خیال ہوتا ہے۔انہوں نے مثال دی کہ جماعت اسلامی کے سیاستدان شریف ہیں جس کی وجہ سے انہیں تاحال اقتدار نہیں ملا۔حریم شاہ نے مزید کہا کہ کہا کہ ایم کیو ایم کے رہنما فاروق ستار نے شو میں غلط بیانی کی ، ان سے کراچی کے ایک ہوٹل میں ہونے والی ملاقات منصوبہ بندی کے تحت ہوئی تھی۔ حریم شاہ نے پروگرام میں گفتگو کے دوران کہا کہ میں فاروق ستار جیسی نہیں ہوں، میں جس سے بھی دوستی کرتی ہوں اسے دنیا کے سامنے بھی تسلیم کرتی ہوں۔

انہوں نے بتایا کہ میری فاروق ستار سے پہلی ملاقات اسلام آباد کے ہوٹل میں ہوئی جہاں لفٹ میں فاروق ستار نے نمبر دیا جس کے بعد دوسری ملاقات لاہور میں ہوئی اس کے بعد 6 ماہ تک میں فاروق ستار سے رابطے میں رہی جس کے بعد پھر میں کراچی آئی اور ان سے ملاقات کی اور بعد ازاں اس ملاقات کی ویڈیوز بھی وائرل ہوئیں۔ویب شو کے دوران میزبان نے سوال کیا کہ کیا اُنہیں لگتا ہے کہ اگر ابھی وہ شیخ رشید احمد کو کال ملائیں تو وہ ان کا فون اٹھا لیں گے جس پر حریم شاہ نے کہا کہ وہ کوشش کر لیتی ہیں۔حریم شاہ نے شو کے دوران شیخ رشید کو کال ملا دی۔ حریم شاہ کی جانب سے

دوسری فون رنگ موصول ہونے پر شیخ رشید نے کال اٹھا لی۔حریم شاہ کو انہوں نے کہا وہ کچھ دیر بعد کال کریں۔حریم شاہ کے اسی وقت بات کرنے کے اصرار پر شیخ رشید نے انہیں ڈانٹ دیا۔حریم شاہ نے کہا کہ ابھی بات کریں ناں، جس پر شیخ رشید نے کہا کہ ‘بکواس بند کریں، میں ابھی بات نہیں کر سکتا۔ حریم شاہ کے موبائل میں شیخ رشید احمد کا نمبر ’شیخو ‘ کے نام سے محفوظ تھا۔حریم شاہ نے مزید کہا کہ مجھے بہت ساری ایسی باتوں کا پتہ ہے جو آپ کو معلوم نہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں