مسلم لیگ ن نے نوازشریف اور مریم نواز کی سزائیں ختم کرنے کا مطالبہ کر دیا

لاہور (نیوز ڈیسک )مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ آڈیو کے معاملے کی تہہ تک جانے کی ضرورت ہے اس کا ازخود نوٹس لینا چاہیے۔سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے سابق چیف جسٹس ثاقب نثار کی مبینہ آڈیو کا فرانزک کرانے کا بھی مطالبہ کیا۔انہوں نے اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مزید کہا کہ کوئی یہ نہیں کہہ سکتا کہ وہ آواز سابق جیف جسٹس کی نہیں،اگر ہم نے حلف نامہ یا آڈیو بنائی ہے تو بالکل سزا دیں۔اگر حلف نامے میں کی گئی بات درست ہے تو ثاقب نثار کو سزا دیں، اگر غلط ہے تو رانا شمیم کو سزا دیں۔

شاہد خان نے مزید کہا کہ نوازشریف اور مریم نواز کو سازش کے تحت سزا دی گئی۔ اب انصاف کے لیے کس کے پاس جاؤں؟۔ثاقب نثار نے نوازشریف اور مریم نواز کو سزائیں دلوائیں، کم از کم اب تو سزا ختم کر دیں۔انہوں نے مزید کہا کہ ہر ادارے کو اپنی آئینی حدود میں رہ کر کام کرنا چاہئیے۔معاملات عدالت میں آئین کے مطابق ہونے چاہیں اور معاملات سفارشات پر نہیں ہونے چاہیں۔مزید کہا کہ چیف جسٹس کا معاملہ آئے گا تو سوموٹو نوٹس لینا چاہیے۔آڈیو کے معاملے کی تصدیق کرانی چاہئیے۔بیان حلفی کی تہہ تک پہنچنے کی ضرورت ہے،اس میں آنے والی باتیں خطرناک ہیں۔قبل ازیں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کا سابق چیف جسٹس ثاقب نثار کی مبینہ آڈیو پر ردِعمل آ یا۔مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کا کہنا ہے کہ نوازشریف اور مریم نواز کو سیاسی عمل سے باہر رکھنے کے لیے اسکیم بنائی گئی۔انہوں نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ اس اسکیم کا پتہ سابق چیف جسٹس ثاقب نثار کی آڈیو کلپ سے لگتا ہے۔ شہباز شریف نے کہا کہ وقت آ گیا ہے کہ غلطیوں کو درست کیا جائے، قوم انصاف کی منتظر ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں