ن لیگ نے حکومت کو مشکل میں ڈالنےکیلئےحکمت عملی تیار کر لی، مریم نواز کواہم ذمہ داری سونپ دی گئی

لاہور(نیوز ڈیسک) پاکستان مسلم لیگ ن نے حکومت کو مشکل میں ڈالنے کے لیے حکمت عملی تیار کر لی ہے۔ جی این این نیوز کے مطابق مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کو میدان میں اتارنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔حکومت کے خلاف سیاسی ماحول کو گرمانے کے لیے مریم نواز شہباز شریف کے ہمراہ میدان میں ہوں گی۔موجودہ حکومت کے خلاف ممکنہ تحریک مسلم لیگ ن کی تیاریاں مزید تیز ہوگئی ہیں۔عوامی سطح پر سیاسی ماحول کو گرمانے اور جارحانہ سیاست کا کردار مریم نواز ادا کریں گی۔ملک بھر میں عوامی سطح پر احتجاجی جلسے یا لانگ مارچ ہوں گے جن سے مریم نواز خطاب کریں گے۔

ان ہاؤس تبدیلی یا پارلیمانی اور انتخابی سیاست کا کردار پارٹی کے صدر شہباز شریف کے سپرد ہو گا۔مہنگائی کے حوالے سے حکومت کے خلاف احتجاجی مظاہروں کے لیے ن لیگ نے تیاریاں شروع کر دی ہیں۔اس حوالے سے قیادت نے تمام ضلعی و تحصیل کے پارٹی عہدیداروں کو ہدایت جاری کی ہیں۔ارکان اسمبلی اور عہدیدار اپنے اپنے علاقوں میں مہنگائی اور بیروزگاری کے ایشو پر لوگوں کو تیار کرے۔حکومت کے خلاف متوقع لانگ مارچ کیلئے لیے ہر حلقے سے 200 لوگوں کو لانے کی ہدایت بھی کی گئی ہے۔دوسری جانب سینٹ اور قومی اسمبلی کے الگ الگ اجلاس دو رزہ وقفے کے بعد (آج)پیر کو دوبارہ ہونگے ،اپوزیشن کی جانب سے بڑھتی ہوئی مہنگائی ، پٹرولیم مصنوعات اور بجلی کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف شدید احتجاج کا امکان ہے ۔تفصیلات کے مطابق سینٹ کا اجلاس چیئر مین سینٹ صادق سنجرانی کی زیرصدار ت اجلاس پیر کی شام چار پارلیمنٹ ہائوس میں ہوگا جس میں اپوزیشن کی جانب سے پٹرولیم مصنوعات اور بجلی کی قیمتوں میں اضافے اور بڑھتی ہوئی مہنگائی کے خلاف شدید احتجاج کیا جائیگا ۔ پیپلز پارٹی کے سینیٹر مصطفی نواز نے بتایاکہ پاکستان پیپلز پارٹی عوام کی پارٹی ہے ، عوام اس وقت شدید مشکلات کا شکار ہیں اور بڑھتی ہوئی مہنگائی ، پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کے خلاف پارلیمنٹ کے اندر اور باہر احتجاج جار ی رہے گی ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں