چین میں بچوں کے سر گول کرنے والے ہیلمٹ کی فروخت میں اضافہ

بیجنگ(نیوز ڈیسک) چین میں ان دنوں بچوں کے سر مکمل گول بنانے کا سلسلہ جاری ہے اور والدین اپنے بچوں کے سر کو گول شکل میں ڈھالنے والےہیلمٹ اور ٹوپیوں پر ہزاروں ڈالر خرچ کررہے ہیں۔ اس کی وجہ یہ ہے چین میں جس کا سر جتنا گول ہوگا وہ اتنا ہی خوبصورت تصور کیا جاتا ہے۔اب والدین ایسے مخصوص تکئے اور ہیلمٹ خرید رہے ہیں کہ جو ان کے نزدیک بچوں کے سرکو خاص دائرے کی شکل میں ڈھال سکتے ہیں۔ اس کے لیے قیمتی ہیلمٹ نما سانچے بھی خریدے جارہے ہیں۔ ان آلات کی فروخت اب باقاعدہ ایک بہت بڑا کاروبار بن چکی ہے۔ دوسری جانب کمپنیوں نے اس کےلیے مخصوص چٹائیاں بھی بنانا شروع کردی ہیں۔

اس سال اکتوبر میں اس رحجان میں تیزی آئی ہے۔ والدین کی بڑی تعداد آن لائن یا دیگر دکانوں کا رخ کررہی ہے۔ ان میں سب سے مشہور شے ہیلمٹ ہے جو ان کے خیال میں چپٹے سر والوں کے لیے بہت مفید ثابت ہوسکتا ہے۔والدین دن میں کئی گھنٹوں تک بچے کے سرپر ہیلمٹ نما سخت ٹوپی منڈھے رکھتے ہیں۔ ان کے خیال میں اوائل عمر میں بچوں کا سر نرم ہوتا ہے اور ٹوپی نما ہیلمٹ پہننے سے وہ خاص شکل میں ڈھل سکتا ہے۔چینی سوشل میڈیا پر ایک خاتون نے اس ایجاد کی تعریف کرتے ہوئے اسے ایک معجزاتی ایجاد قرار دیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح ان کےبچے کا سر بالکل گول ہوگیا جس پر انہیں مسرت ہے۔ والدہ کے مطابق ماہرین نے سات ماہ کی بچی کے لیے بطورِ خاص ایک ہیلمٹ ڈیزائن کروایا جس کے بعد اس کا سر معمول پر آگیا۔اسی طرح ایک اور خاتون نے بتایا کہ ان کا سر پیچھے سے چپٹا تھا جس کی وجہ سے تضحیک کا نشانہ بنایا گیا اور اب وہ نہیں چاہتیں کہ ان کی اولاد بھی اس تکلیف سے گزرے ۔ تاہم ڈیمانڈ کی وجہ سے بعض جدید ہیلمٹ کی قیمت 4300 ڈالر تک ہے۔اسی طرح علی بابا ویب سائٹ پر بھی بہت سی اشیا فروخت ہورہی ہیں ان میں 20 ڈالر کے تکئے اور 15 ڈالر میں چٹائیاں فروخت ہورہی ہیں۔ اسی طرح گول سر والے مضامین، ویڈیو اور پوسٹ کو بہت زیادہ دیکھا اور پڑھا گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں