چینی کی قیمت میں مزید اضافہ کردیا گیا

کوئٹہ (نیوز ڈیسک)چینی کی قیمت میں مزید 5 روپے فی کلو کا اضافہ کر دیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق کوئٹہ میں چینی کی قیمت مزید 5 روپے اضافے کے بعد 160 روپے فی کلو تک پہنچ گئی۔ مارکیٹ ذرائع نے بتایا کہ کوئٹہ میں ہول سیل مارکیٹ میں چینی 142روپے فی کلو فروخت کی جا رہی ہے جب کہ ریٹیل مارکیٹ میں چینی کی قیمت میں مزید 5 روپے اضافہ ہوا ہے جس کے بعد چینی 160 روپے فی کلو فروخت کی جارہی ہے۔خیال رہے کہ گذشتہ 4 روز کے دوران چینی کی فی کلو قیمت میں 47 روپے کا اضافہ ہوا۔ دوسری جانب آل پاکستان شوگرملزایسوسی ایشن نے حکومت کو خبردار کیا ہے

کہ ملک میں چینی کا اسٹاک صرف چار دنوں کا رہ گیا ہے، چینی کی کوئی ذخیرہ اندوزی نہیں کی گئی بلکہ چینی دستیاب ہی نہیں ہے، حکومت بروقت چینی درآمد کرتی تو حالیہ بحران پیدا نہ ہوتا۔چینی بحران کے خاتمے کے لیے حکومت کے ساتھ مل کر چلنا چاہتے ہیں۔چینی کے موجودہ بحران کی ذمہ دار حکومت اور اس کی پالیساں ہیں، حکومت نے بروقت چینی درآمد کرنے کی بجائے درآمدی چینی کے تین ٹینڈرز بھی منسوخ کردیے تھے۔ فی الحال نئی کرشنگ شروع کرنے میں مسائل ہیں۔ وزیراعظم کو چاہئیے کہ مسائل حل کرنے کے لیے شوگر ملز ایسویشن سے ملاقات کریں، پنجاب میں کین کمشنر نے شوگرملز کو کلیئرنس نہیں دی، جبکہ بینک ورکنگ کیپٹل نہیں دے رہے ان حالات میں پھر کرشنگ کیسے شروع ہوگی؟ وزیراعظم نے bhi چینی کی بڑھتی قیمت پر بے بسی کا اظہار کر دیا ہے ، ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ شوگر ملزم ذخیرہ اندوزی کرکے اربوں روپے کما لیتی ہیں،کوئی اقدام کیا جاتا ہے تو اسٹے لے لیتی ہیں،شوگر ملز پر 40 ارب روپے کا جرمانہ عائد کیا گیا،اس پر بھی اسِٹے آرڈر لیا ہوا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں