ڈینگی کے مریض گھروں میں ٹوٹکوں سے کام نہ چلائیں،پروفیسر جاوید اکرم

لاہور (نیوزڈیسک) وائس چانسلر یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز پروفیسر جاوید اکرم نے کہا ہے کہ ڈینگی کے مریض گھروں میں ٹوٹکوں سے کام نہ چلائیں، صرف ڈینگی بخار خطرناک نہیںاصل مسئلہ بخاراترنے کے بعد ہوتا ہے، ڈینگی بخار اترنے کے بعد کم سے کم پانی کا استعمال کریں ۔نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ڈینگی سے بچائو کے لئے احتیاط بہت ضروری ہے، شہری چھت پربھی پانی جمع نہ ہونے دیں۔

ڈینگی کی بروقت تشخیص ،مستند ڈاکٹرز کے پاس جانا ضروری ہے، مریض گھروں میں ٹوٹکوں سے کام نہ چلائیں۔انہوںنے ڈینگی بخار کی علامات بتاتے ہوئے کہا کہ چکر آنا ،بلڈ پریشر لو ہونے پر فوری مستند ڈاکٹر کے پاس جائیں،صرف ڈینگی بخار خطرناک نہیں،اصل مسئلہ بخاراترنے کے بعد ہوتا ہے،بخار اترنے کے بعد ڈرپ نہ لگوائیں ، شہری بخار کے دوران گھر میں رہیں آرام کریں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں