وزیراعظم عمران خان کی زیرصدات اجلاس، وفاقی وزراء مہنگائی پر پھٹ پڑے

اسلام آباد ( مانیٹرنگ ڈیسک ) وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت کور کمیٹی کے اہم اجلاس میں وزراء بھی مہنگائی پر پھٹ پڑے۔روزنامہ جنگ میں رانا غلام قادر کی خبر کے مطابق کور کمیٹی کے ارکان نے کہا کہ مہنگائی کو کم کرنے کیلئے معاشی ٹیم کو حقائق سامنے رکھ کر بات کرنی چاہئے۔کور کمیٹی ارکان نے کہا کہ ہم حلقوں میں جاتے ہیں۔ عوام مہنگائی کے بوجھ تلے دبے ہوئی ہے۔ایک وفاقی وزیر نےوزیراعظم کو صاف صاف بتا دیا کہ یوٹیلیٹی اسٹورز پر چوروں کا راج ہے ۔یوٹیلیٹی اسٹورز پر آٹا،چینی سب کچھ چوری ہو رہا ہے۔دیہی اور دوردراز کے علاقوں میں یوٹیلیٹی اسٹورز سے غریب آدمی کو کوئی ریلیف نہیں مل پا رہا ۔اجلاس میں سندھ کے ارکان نےپیپلز پارٹی کو نشانہ بنایا۔ سندھ ارکان نے وزیراعظم کے

سامنے پیپلز پارٹی کی شکایات کے انبار لگا دیے۔ارکان نے کہا کہ گندم کی سپلائی روکنے اور ترقیاتی منصوبوں میں پیپلز پارٹی رکاوٹ ہے۔پیپلز پارٹی نے گندم کی سپلائی کھولی تو ایک دن میں کراچی میں 8 روپے آٹے کی قیمت میں کمی بھی آئی۔ وزراء نے سوال کیا کہ پیٹرول پر غریب آدمی کو کیسے ریلیف ملے گا کیا احساس پروگرام کے علاوہ پیٹرول پر سبسڈی نہیں ملے گی۔وزیر اعظم نے احساس پروگرام اور وزارت توانائی کو پیٹرول پر سبسڈی کا ٹاسک سونپ دیا۔وزیراعظم کوگھی کی قیمتوں میں کمی پر سیلز ٹیکس کم کرنے کی بھی تجویز دی گئی۔وزیراعظم کو فلور ملز کیلئے 3 ماہ سٹاک کم کرنے کی بھی تجویز دی گئی۔ پرائس کنٹرول کمیٹیوں کو مزید فعال کرنے کے حوالے سے بھی بات چیت کی گئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں