پشاور ،ڈاکوؤں نے صوبائی وزیر شوکت یوسفزئی کے بھائی کو لوٹ لیا

پشاور ( نیوز ڈیسک ) صوبہ خیبر پختونخوا کے دارالحکومت پشاور میں ڈاکوؤں نے صوبائی وزیر شوکت یوسفزئی کے بھائی کو لوٹ لیا۔ تفصیلات کے مطابق صوبائی وزیر شوکت یوسف زئی کے بھائی لیاقت علی کو لوٹنے کے لیے نامعلوم موٹر سائیکل سوار آئے جو کہ 3 موٹرسائیکلوں پر سوار تھے ، ان مسلح افراد نے پشاوری کے علاقہ گل بہار نمبر 2 میں لیاقت علی سے موبائل فون ، رقم ، اے ٹی ایم کارڈ اور دیگر اشیاء چھین کر واردات کے بعد فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔دوسری جانب کراچی میں نجی بینک کے پیسوں سے بھری گاڑی لوٹنے والے ملزمان کو پشاور سے گرفتار کر لیا گیا ،

تین ملزمان کو تھانا تہکال کی حدود سے گرفتارکیا گیا ، ملزمان سے ستر لاکھ روپے اور واردات میں استعمال ہونے والی گاڑی بھی برآمد کر لی گئی ہے ، ملزمان نے اگست میں کراچی میں نجی بینک سے رقم لے جانے والی گاڑی روکی تھی اور واردات کے دوران 20 کروڑ 50 لاکھ روپے لوٹے گئے تھے۔پشاور پولیس حکام کا کہنا ہے کہ واردات سے متعلق کراچی کے تھانہ میٹھادر میں مقدمہ درج کیا گیا تھا ، ملزمان کی گرفتاری سے متعلق کراچی پولیس کو بھی آگاہ کردیا گیا ، بینک کی گاڑی لوٹنے کی واردات میں ڈرائیور بھی شریک تھا ،ملزمان گاڑی کے تعاقب میں تھے، بینک کی گاڑی کے ڈرائیور کو ڈرامائی انداز میں اسلحہ کی نوک پر روکا گیا تھا، بینک کی گاڑی کا ڈرائیور ملزمان کے ساتھ رابطے میں تھا ، نامعلوم مقام پر ملزمان رقم تقسیم کر کے دوسری گاڑی میں روانہ ہوگئے تھے۔واضح رہے کہ واردات 9 اگست کو صبح ساڑھے 9 بجے پیش آئی جس کا مقدمہ میٹھا در تھانے میں درج کیا گیا ، شہر قائد میں نجی سکیورٹی کمپنی کی وین طارق روڈ سے بینک کی رقم ڈیلیورکرنے کے لیے روانہ ہوئی تھی ، میڈیا رپورٹ میں بتایا گیا کہ آئی آئی چندریگرروڈ پرگارڈز کچھ رقم لے کرنیچے اترے تو ڈرائیور وین لے کرفرارہو گیا ، وین میں 20 کروڑ روپے کی رقم موجود تھی ، ڈرائیور نے وین مسکین گلی میں چھوڑدی اور رقم لے کر بھاگ گیا ، واردات سے متعلق پولیس کو اطلاع دی گئی، جس کے بعد میٹھادر پولیس نے واردات کا مقدمہ درج کرکے ڈرائیور کی تلاش شروع کر دی تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں