بجلی پھر مہنگی، حکومت نے فی یونٹ قیمت میں بڑے اضافے کی تیاری کرلی

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)ملک بھر میں مہنگائی کی ستائی ہوئی عوام پر ایک اور بوجھ ڈالنے کی تیاریاں کی جا رہی ہیں۔ ملک بھر میں بجلی کی قیمت میں مزید اضافے کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔رپورٹس کے مطابق ایک بار پھر بجلی مہنگی ہونے کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔بجلی ایک روپیہ 95 پیسے فی یونٹ مہنگی ہونے کا امکان ہے ۔ بجلی اگست کی فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں مہنگی ہوگی۔بجلی مہنگی کرنے کی درخواست پر سماعت مکمل ہو گئی ہے اور فیصلہ محفوظ کر لیا گیا ہے۔نیپرا بجلی مہنگی کرنے سے متعلق فیصلہ بعد میں جاری کرے گا۔اس سے قبل ۔ 10 ستمبر 2021ءکو نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی

نے بجلی کی قیمت میں ایک روپے 38 پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری دی تھی۔نیپرا نے جولائی کے ماہانہ فیول ایڈجسمنٹ چارجز کی مد میں بجلی کی قیمتوں میں ایک روپے 38 پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری دی جس کا اطلاق ستمبر کے مہینے کے بلوں پر ہو گا،نیپرا کے جاری کیے گئے نوٹیفیکیشن کے مطابق سی پی پی اے جی نے ایک روپے 47 پیسے فی یونٹ اضافے کی درخواست کی تھی، اتھارٹی نے یکم ستمبر 2021 کو ایف سی اے پر عوامی سماعت کی تھی جس کی روشنی میں قیمت بڑھانے کا فیصلہ کیا گیا۔یاد رہے کہ حکومت نے دو روز قبل بجلی و گیس صارفین پر 17 فیصد تک اضافی ٹیکس بھی عائد کیا تھا۔ فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے نان فائلرز صنعتی و کمرشل گیس و بجلی صارفین پر 17 فیصد تک اضافی ٹیکس عائد کرنے کا نوٹی فکیشن جاری کیا۔نوٹی فکیشن کے مطابق نان فائلر کمرشل صارفین کے بلوں پر 5 سے17فیصداضافی ٹیکس عائد کیا جائے گا جبکہ ماہانہ 10ہزار روپے تک کے کمرشل صارفین کے بل پر 5 فیصد، ماہانہ 10 سے 20 ہزار روپے کے بل پر7 فیصداضافی ٹیکس اور بیس سے 30 ہزار روپے کے بل پر 10 فیصد اضافی ٹیکس عائد کیا جائ ےگا۔نوٹی فکیشن کے مطابق ماہانہ 30 سے 40 ہزار روپے کے بل پر 12 فیصد اضافی ٹیکس جبکہ ماہانہ 40 سے 50 ہزار روپے بل پر 15 فیصد اور ماہانہ 50 ہزار روپے سے زیادہ کے بل پر17فیصد اضافی ٹیکس عائد ہوگا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں