نجم سیٹھی کی نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ کو کلین چٹ، سکیورٹی اداروں پر سوالات اٹھا دیئے

لاہور(نیوز ڈیسک)حضرت امام حسین رضی اللہ عنہ کے چہلم اور نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم کے دورے کے موقع پر حفاظتی اقدامات کو سخت کرنے کی ’تھریٹ ایڈوائزری‘ کو سوشل میڈیا پر ’تھریٹ الرٹ‘ کے طور پر لیا گیا ہے اور سابق چیئرمین نجم سیٹھی نے بھی نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ کو ’کلین چٹ‘ دیتے ہوئے سکیورٹی اداروں پر سوالیہ نشان اٹھا دیا ۔جو لیٹر سوشل میڈیا پر بڑے پیمانے پر گردش کر رہا ہے وہ صرف رپورٹ کا کورنگ لیٹر ہے، میمو/ لیٹر کی کاپی شیئر کی گئی۔ کور لیٹر میں کہا گیا کہ ’براہ کرم کسی ناخوشگوار واقعے سے بچنے کے لیے معلومات اور ضروری حفاظتی انتظامات کے لیے سنٹرل پولیس آفس ، پنجاب لاہور (آپریشنز برانچ) کے فیکس میمو نمبر ۔ مورخہ 13-09-2021 کی ایک کاپی منسلک کریں۔” دونوں واقعات کا حوالہ دیتے ہوئے ، میمو نے کسی خاص خطرے کے بارے میں اطلاع نہیں دی ۔میمو میں کہا گیا ہے کہ نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم یا حضرت امام حسین رضی اللہ عنہ کے چہلم سے متعلق اجتماع کو ستمبر 2021ء کے آخری ہفتے میں کسی بھی ممکنہ خطرے کو ناکام بنانے کے لیے فول پروف سیکورٹی انتظامات کی ضمانت دی گئی ہے، افغانستان میں دہشتگرد حملوں اور صورتحال کے بڑھتے ہوئے خطرے کے پیش نظر کسی بھی ممکنہ دہشتگردی کے خطرے کو بے اثر کرنے کے لیے احتیاطی اور قبل از وقت اقدامات کیے جائیں۔میمو میں متعلقہ حکام کو ہدایت کی گئی کہ کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے بچنے کے لیے تمام ممکنہ اقدامات کیے جائیں۔ دوسری جانب سابق چیئرمین پی سی بی نجم سیٹھی نے اس ’تھریٹ ایڈوائزری‘ کو سوشل میڈیا پر ’تھریٹ الرٹ‘ کے طور پر پیش کرتے ہوئے نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ کو کلین چٹ دیتے ہوئے سکیورٹی اداروں پر سوالیہ نشان اٹھا دیئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں