پیٹرول پمپ کے باہر شوہر کے انتظار میں کھڑی خاتون اجتماعی عصمت دری کا نشانہ بن گئی

سیالکوٹ (نیوز ڈیسک)سیالکوٹ میں پیٹرول پمپ کے باہر شوہر کے انتظار میں کھڑی خاتون کو اغوا کے بعد مبینہ طور پر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا۔تھانا صدر کے علاقے میں خاتون کا شوہر پیٹرول ڈلوانے پمپ پر گیا تو 5 نامعلوم ملزمان خاتون کو گاڑی میں اغوا کر کے لے گئے اور مبینہ طور پر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے آر پی او گوجرانولہ سے واقعے کی رپورٹ طلب کرتے ہوئے ملزمان کی فوری گرفتاری کا حکم دے دیا۔دوسری جانب چونیاں میں خواتین سے مبینہ زیادتی کا ایک اور وڈیو سکینڈل سامنے آگیا،نشے کا استعمال کر کے حاملہ خاتون سے زیادتی

کے بعد وڈیوز بناکر بلیک میل کرنے والے گروہ کا انکشاف ہوا، خاوند کی مدعیت میں مقدمہ درج کر کے پولیس نے بر وقت کارروائی ہوئے مرکزی ملزم گرفتار کر لیا ۔تفصیلات کے مطابق تھانہ الہ آباد کے نواحی گاؤں نرمل کے کا رہائشی خالد عزیز نے مقامی تھانے میں مقدمہ درج کروایا کہ شامکوٹ کے رہائشی ذیشان نواز وغیرہ میری بیوی اور بیٹی کو اغواء کر کے لے گئے اور نشے کا استعمال کر کے میری حاملہ بیوی کومبینہ طورپر زیادتی کا نشانہ بناتے رہے ،زیادتی کی وڈیوز بنا کر انہیں بلیک میل کرتے رہے کارروائی سے بچنے کیلئے ملزمان نے میری بیوی کو دارالامان جمع کروادیا زیادتی کی وڈیوز سوشل میڈیا پر وائرل کرنے کی دھمکی دیکر ملزمان نے 5لاکھ روپے کی رقم کا تقاضہ کیا 50000ہزارروپے دیکر باقی رقم اداکرنے کا وعدہ کیا جس پر ملزمان نے میموری کارڈ میں میری بیوی کے 9وڈیوز کلپس دئیے پولیس نے 376 ت پ293ت پ اور294ت پ کے تحت مقدمہ درج کر لیا۔اے ایس پی کائنات نے اپنے مؤقف میں کہا کہ مرکزی ملزم ذیشان نواز کوایس ایچ او رشید شہزاد نے گرفتار کر لیا ہے متاثرہ خاندان کے ساتھ مکمل انصاف کیا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں