وزیراعظم عمران خان کا فون ہیک کرنے کی کوششیں، تحقیقات کے حوالے سے حیران کن خبر آگئی

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)بھارت کی جانب سے اسرائیلی کمپنی کے سافٹ ویئر ‘پیگاسس’ کے ذریعے وزیراعظم عمران خان کا فون ہیک کیے جانےکی کوششوں پر اب تک تحقیقات کا آغاز نہ ہوسکا۔اسلام آباد میں وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد میڈیا بریفنگ میں وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے بتایا کہ وزیراعظم کا فون ہیک کیے جانےکی کوششوں پر اب تک تحقیقات کا آغاز نہ ہوسکا، جو کمیٹی بنائی گئی اس کے پروفیشنل اراکین ہی تعینات نہیں ہو سکے ہیں۔ فواد چوہدری نے بتایا کہ بھارت نے اسرائیلی کمپنی کے ساتھ مل کر پاکستانی واٹس ایپ صارفین کا ڈیٹا ہیک کرنےکی کوشش کی تھی اس میں وزیراعظم کا فون بھی شامل تھا ۔ وزیراطلاعات کا کہنا تھا کہ ایف بی آر کی ویب سائٹ 14اگست کو ہیک کرنےکی کوشش کی گئی تھی، انکوائری میں سامنے آیا ہے

کہ ایف بی آر کا زیادہ تر ڈیٹا محفوظ رہا اور ہیکرز ایف بی آر کے زیادہ تر ڈیٹا تک پہنچ نہیں سکے، ایف بی آر ڈیٹا کے تحفظ کو یقینی بنا رہے ہیں۔ان کا مزید کہنا تھا کہ ہیکرزکی جانب سے اس سال مختلف پاکستانی ویب سائٹس پر 10 لاکھ حملے ہوئے ہیں،جنہیں ناکام بنایا گیا۔یاد رہے کہ گذشتہ دنوں بھارت کی جانب سے وزیراعظم عمران خان سمیت کابینہ ارکان کے فون ہیک کرنے کی کوششوں کا انکشاف ہوا تھا۔ذرائع کے مطابق بھارت اسرائیلی کمپنی کے سافٹ ویئر ‘پیگاسس ‘ کے ذریعے وزیراعظم عمران خان سمیت کابینہ ارکان کی فون کالز اور میسجز ریکارڈکرنےکی کوشش کرتا رہا ہے۔امریکی اخبارکی رپورٹ کے مطابق بھارت اسرائیلی کمپنی کا صارف ہے اور بھارتی حکومت کے پاس ‘پیگاسس’ سافٹ ویئرکے ذریعے جاسوسی، نگرانی اور ڈی کوڈ کرنےکی صلاحیت ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں