لاہور،طاقت کے نشے میں چور ریٹائرڈ پولیس افسر کی بیوی نےنوجوان کو اغوا کرکےمبینہ طور پر قتل کردیا

لاہور(وہاب علوی سے)ریٹائرڈ پولیس افسر کی بیوی نے ٹائون شپ کے رہائشی 20سالہ نوجوان گل شیر کو اغوا کرکے مبینہ طور پر قتل کردیا۔ تفصیلات کے مطابق لاہور کے علاقے ٹائون شپ کارہائشی 20 سالہ گل شیر گھر سے دوائی لینے کیلئے موٹرسائیکل پر نکلا اور واپس نہ آیا۔ نوجوان کے ماموں کی جانب سے پولیس کودی گئی درخواست کے مطابق اہلخانہ گل شیر سے موبائل نمبر اور واٹس ایپ پر مسلسل رابطہ کررہے تھے لیکن کوئی جواب موصول نہیں ہورہا تھا رات 9 بج کر 40 منٹ پرایک خاتون نے گل شیر کے موبائل پر واٹس ایپ کا ل سنی اور ہمیں بتایا کہ اس نے گل شیر کو قتل کردیا ہےاس کی لاش فاطمہ کنسلٹنٹ بلیوارڈ آکر لے جائو۔

نوجوان گل شیر کے ماموں بیٹوں کے ہمرا فاطمہ کنسلٹنٹ بلڈنگ پہنچے تو وہاں گل شیر کی موٹرسائیکل نظر آئی اور اسی اثنا میں ثنا نامی خاتون پانچ مسلح افراد کے ہمراہ پہنچ گئی اور ہمیںدھمکیاں اور گالیاں دینے لگی۔ مغوی نوجوان گل شیر کے اہلخانہ کی جانب سے درخواست پر پولیس ٹال مٹول سے کام لیتی رہی اور 5 دن بعد ایف آئی آر درج کی گئی۔مغوی کے اہلخانہ کے مطابق انہیں ثنا نامی خاتون اور اس کے بہنوئی طارق کی جانب سے سنگین تنائج کی دھمکیاں دی جارہی ہے اور پولیس اس سلسلے میں کاروائی کرنے سے گریزاں ہیں ، اہلخانہ کا کہنا ہے کہ ہمیں ہمارا بیٹا زندہ سلامت بازیاب کروا کردیا جائے ، ثناء نامی خاتون پولیس اسٹیشن آکر اعتراف بھی کرچکی ہے کہ میں نے اس کو قتل کردیا ہے لیکن پھر بھی پولیس کاروائی نہیں کررہی۔گل شیر کے اہلخانہ نےآئی جی پنجاب ، وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار اور وزیراعظم عمران خان سے اپیل کی کہ ان کے بیٹے کو بازیاب کرواکر ملزمان کو کیفرکردار تک پہنچایا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں