بلاول بھٹو کا دورہ جنوبی پنجاب فلاپ ہوگیا، کوئی موثر شخصیت پی پی میں شامل نہ ہوسکی

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) بلاول کا دورہ جنوبی پنجاب، کوئی موثر شخصیت پی پی میں شامل نہ ہوسکی۔جنگ اخبار کی رپورٹ کے مطابق پیپلز پارٹی کی مقامی قیادت ملتان کی کسی موثر سیاسی شخصیات کو پارٹی میں لانے میں ناکام ہو گئی۔بلاول بھٹو کو متاثر کرنے کے لیے ملتان کی جن دو شخصیات کو ٹکٹ ہولڈر ظاہر کرکے پارٹی میں شمولیت کرائی گئی۔ان میں سے ایک کی الیکشن 2018ء میں ضمانت ہی ضبط ہو چکی ہے جب کہ دوسرا کبھی الیکشن لڑا ہی نہیں اور دلچسپ امر یہ ہے کہ اسے ق لیگ کا ٹکٹ ہولڈر قرار دیا گیا لیکن ق لیگ انہیں ٹکٹ ہولڈر تو کجا اپنا کارکن تسلیم کرنے سے بھی انکاری ہے۔

گذشتہ روز بلاول بھٹو زرداری سے این اے 155کے ٹکٹ ہولڈر انجینئر عاطف عمران کی ملاقات کرائی گئی۔چئیرمین بلاول بھٹو زرداری کی موجودگی میں انجیئر عاطف عمران نے باضابطہ طور پر پیپلز پارٹی میں شمولیت اختیار کر لی۔عاطف عمران نے 2018ء کے جنرل الیکشن میں مستقبل پاکستان پارٹی کے پلیٹ فارم سے الیکشن میں حصہ لے کر صرف 128 ووٹ حاصل کیے تھے۔2018ء کے انتخابات میں پیپلز پارٹی کو اس حلقہ سے کوئی امیدوار بھی نہیں مل سکا تھا۔جبکہ ملتان سے دوسری شخصیت میاں مظہر عباس جنہیں دو روز قبل مسلم لیگ ق کا این ات 156ملتان سے ٹکٹ ہولڈر ظاہر کرکے پارٹی مین شامل کرایا گیا۔انہوں نے کبھی الیکشن میں حصہ ہی نہیں لیا اور مسلم لیگ ق کی مقامی قیادت نے بھی ان سے لاتعلقی کا اظہار کیا ہے۔دوسری جانب چیئر پرسن قائمہ کمیٹی برائے داخلہ مسرت جمشید چیمہ نے کہا ہے کہ ،بلاول بھٹو پنجاب کوفتح کرنے کے خواب چھوڑ کر ہاتھ سے نکلتے ہوئے سندھ پر توجہ دیںجو آئندہ عام انتخابات میں تحریک انصاف کا قلعہ بننے جارہا ہے ۔۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) یا پیپلز پارٹی کی قیادت کا قومی سیاست یا قومی معاملات میں ہرگز کوئی کردارنہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں