خالی سکول کے اندر گیند لینے کیلئے جانے والا4 سالہ بچہ درندگی کا نشانہ بن گیا

کراچی( نیوز ڈیسک) صوبہ سندھ کے دارالحکومت کراچی میں 4 سالہ بچے کو زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا، بچہ خالی اسکول کے اندر گیند لینے گیا تھا جہاں چوکیدار کے بیٹے نے اس کے ساتھ زیادتی کی۔تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے ناظم آباد میں 4 سالہ بچے سے زیادتی کا واقعہ پیش آیا ہے، بچہ کھیل کے دوران اسکول میں جانے والی گیند لینے اندر گیا تھا۔ واقعہ نجی اسکول میں پیش آیا۔متاثرہ بچے کے والد کی مدعیت میں مقدمہ درج کرلیا گیا ہے، والد کا کہنا ہے کہ وہ اسکول کے قریب کرائے کے گھر میں رہتے ہیں، میرا بیٹا دیگر بچوں کے ساتھ کھیل رہا تھا۔والد کے مطابق

اسی دوران گیند اسکول کے اندر گئی تو بیٹا لینے اندر چلا گیا جہاں اسکول چوکیدار کے بیٹے نے بچے کو زیادتی کا نشانہ بنایا۔پولیس نے بچے سے زیادتی میں ملوث ملزم کو گرفتار کرلیا ہے۔علاوہ ازیں کراچی کے علاقے سرجانی ٹائون میں سفاک نوجوان نے 13 سال کی بچی کو مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔پولیس کے مطابق کراچی کے علاقے سرجانی ٹائون میں 18 سالہ نوجوان نے 13 سالہ کی بچی کو ملنے کے لیے بلایا اور اسے مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنادیا۔پولیس کے مطابق واقعہ سیف المری گوٹھ میں پیش آیا، لڑکے کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں