پناہ گاہ میں بیٹھے امریکی فوجیوں کی وائرل تصویر کی حقیقت سامنے آگئی، پی ٹی آئی رہنما نے وضاحت کردی

اسلام آباد (نیوز ڈیسک ) پناہ گاہ میں بیٹھے امریکی فوجیوں کی وائرل تصویر کی حقیقت سامنے آگئی۔ تفصیلات کے مطابق افغانستان میں طالبان کے کنٹرول کے بعد امریکی فوجیوں کے انخلاء کی تصاویر تیزی سے سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہیں ، جن میں سے ایک تصویر میں امریکی فوجی اہلکاروں کو پاکستان میں قائم پناہ گاہ میں بیٹھے دکھایا گیا ہے ، مذکورہ تصویر پر پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء و سینیٹر فیصل جاوید خان نے وضاحت دی ہے کہ یہ تصویر جعلی ہے ، برائے مہربانی احساس پناہ گاہوں کو متنازعہ نہ بنائیں۔سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری کردہ اپنے پیغام میں انہوں نے

قرآن پاک کی ایک آیت کا حوالہ دیتے ہوئے اس کا ترجمہ لکھا کہ ’اے لوگو! جو ایمان لائے ہو ، اگر کوئی فاسق تمہارے پاس کوئی خبر لے کر آئے تو تحقیق کر لیا کرو ، کہیں ایسا نہ ہو کہ تم لوگوں کو نادانستہ نقصان پہنچا بیٹھو اور پھر اپنے کیے پر پشیمان ہو‘۔پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء فیصل جاوید خان نے عوام سے اپیل بھی کی ہے کہ پناہ گاہوں میں کام کرنے والے رضاکاروں اور مخیر حضرات جو کھلے دل سے عطیہ کرتے ہیں اور خاص طور پر وہاں آنے والے دیہاڑی دار مزدور لوگوں کی برائے مہربانی دل آزاری نہ کریں، شکریہ! واضح رہے کہ 31اگست امریکہ کی افغانستان سے انخلا کا آخری دن تھا ، امریکہ اور اتحادیوں نے کوشش کی تھی کہ انخلا کی تاریخ بڑھا دی جائے مگر طالبان کی طرف سے دھمکی دی گئی تھی کہ اگر ڈیڈ لائن کے بعد امریکی یا اتحادی افواج افغانستان میں ہوئی تو نتائج کی ذمہ دار وہ خود ہوں گی لہٰذا ڈیڈ لائن بڑھانے کی بجائے امریکہ نے آج آخری روز ہی اپنا انخلا مکمل کر لیا ، پینٹا گون نے بریفنگ دیتے ہوئے واضح کیا کہ تمام امریکی اہلکار افغانستان سے نکل چکے ہیں ، امریکی شہریوں کو لے کر آخری پانچ جہاز حامد کرزئی ایئرپورٹ سے نکلے ہیں ، جس کے ساتھ ہی امریکہ نے افغانستان سے اپنے انخلا کی تصدیق کر دی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں