طالبان نے بغیر کسی تربیت کے امریکا کا یوایچ 60 بلیک ہاک ہیلی کاپٹراڑا کر سب کو حیران کر دیا،ویڈیو وائرل

کابل (نیوز ڈیسک) طالبان نے بغیر کسی تربیت کے امریکا کا جدید ترین یوایچ 60 بلیک ہاک ہیلی کاپٹراڑا کر سب کو حیران کر دیا، امریکی فوج کا طالبان کے پاس ہیلی کاپٹر اڑانے کی صلاحیت نہ ہونے کا دعوی بھی غلط ثابت، ویڈیو وائرل ہو گئی- تفصلات کے مطابق طالبان نے امریکی یوایچ 60 بلیک ہاک ہیلی کاپٹر کی پرواز کرکے دنیا کو حیران کردیا،پرواز کی ویڈیو تیزی سے سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی۔بی بی سی اردو کی رپورٹ میں سوال اٹھایا گیا ہے کہ افغانستان میں طالبان کے پاس اب امریکی جنگی طیارے اور گاڑیاں تو آگئیں لیکن کیا وہ انہیں استعمال کر سکتے ہیں؟

حال ہی میں سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ایک ویڈیو میں دکھایا گیا ہے کہ کس طرح طالبان جنگجووں نے قندھار ایئرپورٹ پر امریکی ہیلی کاپٹر بلیک ہاک کی ایک نمائشی پرواز کی ہے۔اس ویڈیو نے دنیا کو یہ پیغام دیا ہے کہ اب طالبان کوئی گنوار سپاہیوں کا گروہ نہیں جو ٹوٹے پھوٹے پک اپ ٹرکوں پر کلاشنکوف اور رائفلیں لے کر گھوم رہے ہوں۔ویڈیو نے دنیا کو ورطہ حیرت میں ڈال دیاہے کہ طالبان کے پاس تربیت یافتہ افرادی قوت ہے جو جدید ہتھیاروں اور جنگی سازوسامان کے استعمال سے بخوبی آشنا ہیں ۔ دوسری طرف افغانستان سے امریکا کے انخلاء کی وجہ سے افغان طالبان کے ہاتھ اربوں ڈالرز کا مال غنیمت آنے کا انکشاف ہوا ہے ، اس حوالے سے امریکی ری پبلکن کانگریس کے رکن جم بینکس نے اہم انکشافات کرتے ہوئے صدر جوبائیڈن کی حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بھی بنایا ، جم بینکس کے مطابق افغانستان سے انخلاء کے فیصلے کی وجہ سے 85 ارب ڈالرز مالیت کا امریکی فوجی ساز و سامان افغان طالبان کے ہاتھ لگ گیا ہے ، امریکی فوج کی جانب سے افغانستان میں جو فوجی ساز و سامان چھوڑا گیا ہے اس میں 75 ہزار گاڑیاں، 200 ہوائی جہاز، ہیلی کاپٹر اور 6 لاکھ چھوٹے اور ہلکے ہتھیار شامل ہیں۔کانگریس کے رکن کے مطابق افغان طالبان کے پاس اب دنیا کے 85 فیصد ممالک سے زیادہ بلیک ہاک جنگی ہیلی کاپٹر موجود ہیں ، اس کے علاوہ بھی جدید ترین جنگی ہتھیار اور آلات افغان طالبان کے ہاتھ لگ چکے ہیں ، اندھیرے میں دیکھنے والے چشمے، دیگر جدید آلات کے علاوہ ایسے لوگوں کا

بائیومیٹرک ڈیٹا بھی طالبان کے ہاتھوں میں چلا گیا ہے جو امریکا کیساتھ کام کرتے رہے ہیں۔جم بینکس نے امریکی حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ جوبائیڈن حکومت کی نااہلی کی وجہ سے ہی اربوں ڈالرز کے ہتھیار اور جدید آلات افغان طالبان کے ہاتھ میں چلے گئے، جب کہ امریکی حکومت یہ تمام ساز و سامان افغانستان سے واپس لانے کا کوئی ارادہ بھی نہیں رکھتی ، اگر مستقبل میں افغانستان میں موجود فوجی ساز و سامان امریکا کیخلاف استعمال ہوا تو اس کی ذمے جوبائیڈن حکومت ہو گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں