میں واپس آؤں گا، پر امید ہوں نا امیدی و مایوسی کی یہ راتیں جلد ختم ہوجائیں گی، اشرف غنی

یو اے ای (نیوز ڈیسک)مجھ سے پہلے بھی بہت سے لیڈر افغانستان سےگئے اور پھر واپس آئے، میں بھی واپس آؤں گا، پر امید ہوں نا امیدی و مایوسی کی یہ راتیں جلد ختم ہوجائیں گی، سابق افغان صدر اشرف غنی کا ویڈیو پیغام سامنے آ گیا ۔ تفصیلات کے مطابق 5 اگست 2021 کو طالبان کے کابل میں داخل ہونے کے بعد ملک سے فرار ہونے والے افغان صدر اشرف غنی نے قوم سے خطاب کیا ہے۔متحدہ عرب امارات نے آج اس بات کی تصدیق کی ہے کہ اشرف غنی اور ان کے اہل خانہ امارات میں ہیں اور انہیں انسانی ہمدردی کی بنیاد پر ملک میں پناہ دی گئی ہے۔اب فیس بک پر اشرف غنی نے قوم سے خطاب کیا ہے۔

اشرف غنی کے آفیشل فیس بک پیج پر جاری ویڈیو میں انہوں نے کہا کہ دشمن کابل آکر مجھےایک سے دوسرے کمرے میں تلاش کررہے تھے، مجبوری میں افغانستان سے گیا ہوں۔اشرف غنی نے مزید کہا کہ ہم سے پہلے بھی بہت سے لیڈر افغانستان سےگئے، پھر واپس آئے، چاہتاتھا کابل میں خونریزی نہ ہو، میری زندگی کا سب سے بڑا سرمایہ کتاب ہے۔انہوں نے کہا کہ پر امید ہوں نا امیدی و مایوسی کی یہ راتیں جلد ختم ہوجائیں گی، افغانستان ایک بار پھر آزاد اور ترقی کی جانب گامزن ہوگا۔ان کا کہنا تھا کہ مجبوری میں افغانستان سے گیا ہوں۔ان کا کہنا تھا کہ میرا اچانک افغانستان چھوڑنا امن و امان برقرار رکھنے کے لیے تھا۔مفرور افغان صدراشرف غنی نے کابل سے نکلنے کے بعد پہلی نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ افغانستان کے مستقبل کے لیے فکر مند ہیں۔ انہوں ںے کہا کہ کثیر رقم ساتھ لے جانے کی اطلاعات بے بنیاد ہیں۔ انہون ںے کہا کہ لوگ صورتحال سے آگاہ ہوئے بغیر ہی طعنہ دے رہے ہیں۔مفرورافغان صدر نے کہا کہ وہ افغانستان کے لوگوں سے محبت کرتا ہوں۔ انہوں ںے کہا کہ ان سے قبل بھی بہت سے افغان لیڈر ملک سے باہر گئے اور پھر واپس آگئے۔ انہوں ںے کہا کہ ان کی زندگی کا سب سے بڑا سرمایہ کتاب ہے۔مفرور صدر نے دعویٰ کیا کہ ان پر جو بھی الزامات لگے وہ جھوٹے اور بے بنیاد ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ دشمن کابل میں آکر ایک کمرے سے دوسرے کمرے میں مجھے تلاش کر رہے تھے۔انہوں ںے کہا کہ کابل میں کوئی خونریزی نہیں ہوئی جو اللہ کا بڑا احسان ہے۔

واضح رہے کہ وزارت خارجہ یواے ای نے اس بات کی تصدیق کردی ہے کہ سابق افغان صدر اشرف غنی یواے ای میں موجود ہیں، وزارت خارجہ یواے ای نے کہا کہ انسانی ہمدردی کی بنیاد پر اشرف غنی کو وطن آنے کی اجازت دی، اشرف غنی اپنے خاندان کے افراد کے ہمراہ اپنے ولاز میں رہائش پذیر ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں