محرم الحرام میں تخریب کاری کا بڑا منصوبہ ناکام ، ٹی ٹی پی کے دو انتہا پسند گرفتار

کراچی(نیوز ڈیسک) صوبہ سندھ کے دارالحکومت کراچی میں محرم الحرام کے دوران دہشت گردی کا منصوبہ ناکام بناتے ہوئے ٹی ٹی پی کے 2 دہشت گرد گرفتار کرلیے گئے۔ تفصیلات کے مطابق کراچی پولیس نے شہرقائد کے علاقے ابراہیم حیدری سے کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے 2 دہشت گردوں کو گرفتار کر لیا گیا ، دہشت گردوں سے ایک کلو سے زائد بارودی مواد اور ڈیٹونیٹر وائر برآمد ہوئے۔پولیس کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ گرفتار دہشت گردوں میں سے ایک کی شناخت امیر زادہ عرف مخلص کے نام سے ہوئی جو کہ 2001 میں کالعدم ٹی ٹی پی میں شامل ہوا ، گرفتار کیے گئے دہشت گرد افغانستان سے

عسکری تربیت یافتہ ہیں ، جن کے افغانستان میں نیٹو فورسز پر حملوں میں ملوث ہونے کا بھی انکشاف ہوا ، اس کے علاوہ گرفتار دہشت گرد اغواء اور دہشت گرد کارروئیوں میں ملوث رہے۔چند روز قبل بھی سکیورٹی اداروں نے بروقت کاروائی کرکے کراچی میں دہشتگردی کا بڑا منصوبہ ناکام بنا دیا، کراچی شیرشاہ سے کالعدم تنظیم کے 2 دہشتگرد گرفتار کرلیے، دہشت گرد بھارتی خفیہ ایجنسی کیلئے کام کرتے ہیں، ملزمان ریلوے ٹریک، کوئلہ ٹرین اور گیس لائن کو نشانہ بنانا چاہتے تھے ، مبینہ دہشت گردوں سے 2 دستی بم، ملک دشمن لڑیچر پر مبنی سی ڈیز برآمد ہوئی ہیں۔ایس ایس پی کیماڑی فدا حسین نے بتایا کہ گرفتار مبینہ دہشت گرد پڑوسی ملک کی خفیہ ایجنسی کے لیے کام کرتے ہیں، مبینہ دہشت گرد سوشل میڈیا پر نوجوانوں کی ذہن سازی میں بھی ملوث ہیں۔ ملزموں نے ریلوے ٹریک، کوئلہ ٹرین اور گیس لائن کو نشانہ بنانے کی منصوبہ بندی کی ، مبینہ دہشت گرد قانون نافذ کرنے والے اداروں کے افسران کی ریکی بھی کررہے تھے، مبینہ دہشت گردوں کو حساس ادارے کی مدد سے پکڑا گیا۔اسی طرح لاہور میں بھی سکیورٹی اداروں نے بروقت کاروائی کرکے دہشتگردی کی منصوبہ بندی ناکام بنائی تھی، سی ٹی ڈی نے لاہور سمیت پنجاب بھر میں مختلف انٹیلی جنس بیسڈ آپریشن کیے، خفیہ آپریشن کے دوران لاہور سے کالعدم دہشتگرد تنظیم القاعدہ سے تعلق رکھنے والے3 دہشتگردوں کو گرفتار کرلیا، ان دہشتگردوں میں محمد فرحان ، محمد ارشد اور مظہر عباس شامل ہیں، گرفتار دہشتگرد حکومتی تنصیبات کو نشانہ بنانے کا منصوبہ بنا رہے تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں