انتہائی افسوسناک خبر، 67پاکستانی جان کی بازی ہار گئے، میتیں گھرپہنچنے پر کہرام مچ گیا

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)پاکستان میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران عالمی وبا کورونا وائرس سے مزید 67 افراد جاں بحق ہوگئے۔ ملک بھر میں کورونا کے باعث اموات کی مجموعی تعداد 23 ہزار 529 ہو گئی۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کی جانب سے جاری تازہ اعدادو شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 3 ہزار 582 کورونا کیسز رپورٹ ہوئے۔ ملک بھر میں کورونا کیسز کی مجموعی تعداد 10 لاکھ 43 ہزار 277 ہو گئی۔این سی او سی کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹے میں49 ہزار 798 کورونا ٹیسٹ کیے گئے۔ گزشتہ 24 گھنٹے میں کورونا مثبت کیسز کی شرح 7.19 فیصد رہی۔

سندھ میں کورونا کے کیسز کی تعداد تین لاکھ 87 ہزار 261، خیبر پختونخوا میں ایک لاکھ 45 ہزار 306، پنجاب میں تین لاکھ 58 ہزار 387، اسلام آباد میں 88 ہزار 344، بلوچستان میں 30 ہزار 627، آزاد کشمیر میں 25 ہزار 34 اور گلگت بلتستان میں 8 ہزار 318 ہو گئی ہے۔کورونا کے سبب سب سے زیادہ اموات پنجاب میں ہوئی ہیں جہاں 11 ہزار 83 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں جبکہ سندھ میں 6 ہزار 57، خیبرپختونخوا 4 ہزار 477، اسلام آباد 804، گلگت بلتستان 147، بلوچستان میں 328 اور آزاد کشمیر میں 633cافراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔ وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے زیادہ کورونا والے شہروں میں نئی پابندیاں لگانے کا اعلان کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نئی پابندیوں کا اطلاق 3 اگست سے 31 اگست تک ہوگا۔وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈٓکٹر فیصل سلطان کے ہمراہ میڈیا بریفنگ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کراچی اور حیدرآباد میں حالیہ بندشیں جاری رہیں گی۔ انہوں نے کہا کہ اسلام آباد، راولپنڈی، لاہور، فیصل آباد، پشاور، ایبٹ آباد اور ملتان میں بھی پابندیاں لگیں گی۔وفاقی وزیر اسد عمر نے کہا کہ دفاتر میں ملازمین کی حاضری 50 فیصد ہو گی اور ایک مرتبہ پھر ہفتے میں دو چھٹیاں دی جائیں گی تاہم انہوں ںے واضح کیا کہ چھٹیاں کس دن ہوں گی؟ اس کا فیصلہ صوبے ازخود کریں گے۔ انہوں ںے کہا کہ ان ڈور ڈائننگ بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جب کہ آؤٹ ڈور ڈائننگ جاری رہے گی۔پاکستان تحریک انصاف سے تعلق رکھنے والے وفاقی وزیر اسد عمر نے کہا کہ پبلک ٹرانسپورٹ میں بھی مسافروں کی تعداد 50 فیصد رکھنی ہو گی۔ انہوں ںے کہا کہ مارکیٹوں کے اوقات کار دوبارہ شب 8 بجے کردیے گئے ہیں جب کہ اس سے قبل اوقات کار شب 10 بجے تک تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں