سیالکوٹ انتخابات میں شکست پر عثمان ڈار نے عطا تارڑ کے نئے نام کیلئے تجاویز مانگ لیں

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)کس نام سے پکاروں، کیا نام ہے تمہارا؟ مسلم لیگ ن کا دیہاڑی دار شعبدہ باز اپنا ہی دیا ہوا چیلنج ہار چکا، سیالکوٹ انتخابات میں شکست پر عثمان ڈار نے عطا تارڑ کے نئے نام کیلئے تجاویز مانگ لیں- تفصیلات کے مطابق معاون خصوصی برائے امور نوجوانان عثمان ڈار نے مسلم لیگ ن کے رہنما عطا تارڑ کے نئے نام کے لیے تجاویز مانگ لیں۔نجی ٹیلی ویژن چینل کے مطابق گزشتہ روز پی پی 38 میں ن لیگ کی شکست پر عطا تارڑ کی پروگرام میں گفتگو کی ایک ویڈیو وائرل ہوئی تھی جس میں عطا تارڑ نے عثمان داڑ کو چیلنج کرتے ہوئے کہا تھا کہ ‘سیالکوٹ میں

ایک اور ضمنی الیکشن ہورہا ہے میں وہاں آرہا ہوں ،میں اوپن چیلنج کرتا ہوں کہ ضمنی الیکشن میں مقابلہ کریں اگر 10 ،12ہزار کی لیڈ سے نہ ہرایا تو میرا نام عطا تارڑ نہیں ہے‘۔واضح رہے کہ پی پی 38 سیالکوٹ ضمنی انتخاب کے غیر حتمی غیر سرکاری نتائج میں پاکستان تحریک انصاف کے نوجوان امیدوار احسن سلیم بریار نے فتح اپنے نام کی جبکہ مسلم لیگ ن کے امیدوار چوہدری سبحانی دوسرے نمبر پر رہے۔ تمام پولنگ اسٹیشنز کے غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق تحریک انصاف کے امیدوار احسن سلیم بریار 60588 ووٹ لے کر پہلے جبکہ مسلم لیگ (ن) کے طارق سبحانی 53471 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔چیلنج جیتنے پر اب عثمان ڈار نے سوشل میڈیا پر پول کروایا ہے جس میں انہوں نے عطا تارڑ کے نئے نام کے لیے تجاویز مانگی ہیں۔ عثمان ڈار نے لکھا کہ ن لیگ کا شعبدہ باز اپنا ہی دیا چیلنج ہار چکا ہے، کارکنان عطا تارڑ کی سیاسی بصیرت کے مطابق نام تجویز کریں۔ انہوں نے کہا کہ عطا تارڑ چاہیں تو خود بھی نئے نام سے آگاہ کرسکتے ہیں، ن لیگی رہنما نے اے آر وائی نیوز پر سیالکوٹ کا معرکہ ہارنے پر نام بدلنے کا چیلنج دیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں